شہریوں کو فریضہ حج سے روکنے پر قطر اور یو اے ای تنازع شدت اختیار کر گیا

شہریوں کو فریضہ حج سے روکنے پر قطر اور یو اے ای تنازع شدت اختیار کر گیا

ابوظہبی(آئی این پی ) قطر اور متحدہ عرب امارات کے درمیان تنازع میں مزید شدت اختیار کر گیا، یو اے ای کے وزیر مملکت برائے خارجہ انور قرقاش نے کہا ہے کہ قطری قیادت میں شعوری وژن نہیں ہے، وہ عبادت کو سیاست کا رنگ دینا اور شہریوں کو فریضہ حج کی ادائی سے روکنے کے لیے خوف ناک حربے استعمال کرنا بند کرے۔ متحدہ عرب امارات کے وزیر مملکت برائے خارجہ انور قرقاش نے اپنے جاری کردہ بیان میں موقف اختیار کیا ہے کہ قطری حکومت اپنے شہریوں کو فریضہ حج کی ادائیگی سے روک رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ قطری حکام اپنے شہریوں کو فریضہ حج کی ادائیگی سے روک کر عبادت کو سیاست سے آلودہ کرنے کی پالیسی پرعمل پیرا ہے۔انور قرقاش نے قطری حکام کو زور دیتے ہوئے کہا کہ وہ عبادت کو سیاست کا رنگ دینا اور شہریوں کو فریضہ حج کی ادائی سے روکنے کے لیے خوف ناک حربے استعمال کرنا بند کرے، ایسے اقدامات اپنی ترجیحات اور فیصلوں میں عدم اعتماد کا واضح ثبوت ہے۔قبل ازیں عالمی عدالت برائے انصاف نے رواں ماہ 25 جولائی کو قطر کے حق میں فیصلہ سناتے ہوئے یو اے ای کو قطری شہریوں کے حقوق کا تحفظ یقینی بنانے کا حکم دیا تھا۔

مزید : عالمی منظر