روااں سال283کم سن بچوں سے بد اخلاقی، پولیس112واقعات کے ملزمان گرفتار نہ کر سکی

روااں سال283کم سن بچوں سے بد اخلاقی، پولیس112واقعات کے ملزمان گرفتار نہ کر سکی

لاہور(خبرنگار) صوبائی دارالحکومت میں رواں سال کے دوران 283 کم سن بچوں کو مبینہ طور پر بداخلاقی کا نشانہ بنایا گیا۔ پولیس 112 واقعات کے ملزمان کو گرفتار تک نہ کر سکی۔ تفصیلات کے مطابق رواں سال کے سات ماہ میں شہر میں کم سن بچوں اور بچیوں سے مبینہ بداخلاقی کے 283 واقعات پیش آئے ہیں جس میں پولیس صرف 171 واقعات میں تفتیش مکمل کر سکی ہے اور 112 کیسوں میں پولیس ملزمان تک رسائی حاصل نہیں کرسکی ہے۔ پولیس ذرائع کے مطابق ماڈل ٹاؤن ڈویژن میں 57 واقعات رونما ہوئے جس میں سے 22 واقعات میں پولیس ملزمان کو گرفتار نہیں کر سکی ہے۔ صدرڈویژن میں 54 واقعات پیش آئے جن میں سے پولیس 18 واقعات میں ملزمان کو گرفتار نہ کر سکی۔ اسی طرح سب سے زیادہ کینٹ ڈویژن میں 97 واقعات پیش آئے جن میں سے 27 واقعات کی فائلوں کو پولیس نے دبا رکھا ہے اور ملزمان گرفتار نہ ہونے پر ورثا دربدر کی ٹھوکریں کھانے پر مجبور ہیں جبکہ سٹی ڈویژن میں 9 واقعات ، اسی طرح سول لائن میں 19 واقعات ، اقبال ٹاؤن میں 17 واقعات میں ملوث ملزمان تک پولیس رسائی حاصل نہیں کرسکی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ پولیس نے جن171 مقدمات میں تفتیش مکمل کرنے کا دعویٰ کیا ہے ان واقعات میں بھی پولیس نے بیشتر مقدمات میں ناقص تفتیش کی ہے جن میں سے 20 مقدمات کے چالان پر اعتراض لگائے گئے ہیں۔ جبکہ اس حوالے سے ایس ایس پی انویسٹی گیشن محمد اویس کا کہنا ہے کہ مقدمات کی ناقص تفتیش کرنے والے تفتیشی افسران کے خلاف کارروائی کی جا رہی ہے اوراس حوالے سے رپورٹ طلب کر لی گئی ہے۔

مزید : علاقائی