بھارت نے 70فیصد پانی روک لیا ، دریائتے نیلم سکڑ کر نالہ لئی کی شکل اختیار کر گیا

بھارت نے 70فیصد پانی روک لیا ، دریائتے نیلم سکڑ کر نالہ لئی کی شکل اختیار کر ...

مظفرآباد(این این آئی)دریائے نیلم اچانک ہی نالہ لئی کی شکل اختیار کرگیا ٗ بھارت نے عالمی قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے 70فیصدپانی روک کر آزاد کشمیر کے دارلحکومت مظفرآباد ڈویژن کے متحدہ علاقوں کو پانی کی شدید قلت میں مبتلا کردیا،حکومت آزادکشمیر کی جانب سے نہ کوئی آواز نہ ہی احتجاج! شہریوں کو پانی کی سپلائی میں شدید مشکلات کا سامنا،ساون کے مہینے میں جہاں بارشوں کے باعث دریاکے پانی میں کافی حد تک طغیانی پڑجاتی ہے وہی د ریا نالہ لئی کی شکل اختیار کرگیا۔تفصیلات کے مطابق دریائے نیلم جو کہ آزادکشمیر کے مختلف علاقے اٹھ مقام،نیلم سمیت دیگر علاقوں سے ہوتے ہوئے نیلم جہلم پراجیکٹ کو بھی پانی دیتا تھا وہی دریائے نیلم گزشتہ روزاچانک ہی نالہ لئی کی شکل اختیار کرگیا،دریائے میں 30فیصد بھی پانی باقی نہ رہ سکا جس کے باعث مختلف علاقوں میں پینے کے پانی سپلائی میں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے جبکہ بھارت نے عالمی قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے دریائے نیلم کا پانی روک کر انسانی حقوق کی بدترین خلاف ورزی کی ہے ، اصولاً بھارت اپنے ڈیم مکمل کرنے کے بعد 50%پانی روکنے کا اختیار رکھتا ہے مگر بھارت نے اپنی ہٹ دھرمی جاری رکھتے ہوئے 70%پانی روک کر دریائے نیلم کے آس پاس بسنے والی آبادیوں کو پانی سے محروم کردیا ہے جس پر نہ تو حکومت آزادکشمیر نے کوئی بیان دیا نہ ہی احتجاج! جبکہ خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے کہ اگر بھارت نے اپنا سلسلہ برقرا ر رکھا تو مظفرآباد میں پانی کی شدید قلت ہوجائیگی جس کے باعث مختلف علاقوں کو محکمہ پبلک ہیلتھ پانی سپلائی نہیں کرسکے گاجبکہ حکومت پاکستان بھارت کے اِس اقدام کے خلاف فوری طور پر نوٹس لے کر آگاہ کرے تاکہ آزادکشمیر کے دارلحکومت مظفرآباد میں بھارت پانی چھوڑنے پر مجبور ہوجائے۔

مزید : علاقائی