کرنٹ لگنے سے2پلمبر، حادثات میں 3افراد چل بسے

کرنٹ لگنے سے2پلمبر، حادثات میں 3افراد چل بسے

راجن پور‘ خان گڑھ‘ محسن وال‘ چشتیاں‘ شاہ جمال (ڈسٹرکٹ رپورٹر‘ نامہ نگار‘ نمائندہ پاکستان) بورنگ کے دوران پائپ میں کرنٹ آنے سے دو پلمبر چل بسے۔ بارہ سالہ طالبہ نے موت کو گلے لگا لیا۔ نہر میں گر کر خاتون جاں بحق ہوگئی۔ دیگر حادثات میں تین افراد زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھے۔ اس حوالے سے راجن پور سے ڈسٹر کٹ رپورٹر‘ نامہ نگار کے مطابق راجن پور شہر کا مستری رمضان اپنے ساتھی مزدور ملنگی کے ساتھ امیر حمزہ کالو نی واقع ٹھیڑی روڈ پر ایک(بقیہ نمبر19صفحہ12پر )

مکان میں بورنگ کررہا تھا کہ لوہے کا پائپ گھر کے اُوپر سے گزر نے والی گیارہ ہزار کے وی کی مرکزی تاروں سے ٹکرا گیا تاروں سے ٹکرانے کے باعث پائپ میں کرنٹ دوڑ نے سے دونوں مزدور موقع پر ہی جھلس گئے اور جان کی بازی ہار گئے اطلاع ملنے پر ریسکیو ڈبل ون ڈبل ٹو کی ٹیموں نے لاشوں کوڈسٹر کٹ ہیڈ کوآرٹر ہسپتال منتقل کردیا جہاں سے ان لاشوں کوان مزدوروں کے گھروں میں منتقل کیا گیا گھروں میں لاشیں پہنچنے پر کہرام مچ گیا دوسری جانب اہل محلہ نے بتایا کہ گذشتہ ایک ماہ سے محکمہ واپڈا کے دفتر کے چکر کاٹ رہے ہیں لائن سپر ٹنڈنٹ اور ایس ڈی اوذیشان کودرخواستیں بھی دیں اور التجا ء بھی کی کہ مرکزی تاریں گھروں کی چھتوں پرپڑی ہیں اور کسی بھی وقت کوئی ناخوشگوار واقعہ رونماء ہوسکتا ہے مگر کسی نے ایک بھی نہ سنی اور آج یہ واقعہ رونماہوگیا‘ اُنہوں نے چیف ایگزیکٹو میپکو ملتان سے نااہل ایس ڈی اوواپڈا کے خلاف ان ہلاکتوں کا مقد مہ درج کر نے کا مطا لبہ کیا ہے۔خان گڑھ سے نامہ نگارکے مطابق موچی والی کا رھائشی محمد اصغر موٹر سائیکل پر سبزی منڈی مظفر گڑھ سے واپس گھر جا رہا تھا کہ خان گڑھ بائی پاس پر تیز رفتار ٹرک کی ٹکر سے موقع پر جان بحق ہو گیا جبکہ ایک اور حادثہ گل والا پر پیش آیا جس میں موٹر سائیکل سوار نوجوان دلدار احمد تیز رفتاری کی وجہ سے بے قابوہو کر ٹرالی سے ٹکرا گیا جس کے نتیجہ میں وہ موقع پر جاں بحق ہو گیا۔چشتیاں سے نمائندہ پاکستان کے مطابق متوفیہ ساتویں کلاس کی طالبہ تھی اور ساجد عمر دراز خاں کی بیٹی تھی وقوعہ کے روز وہ گھر والوں سے اس کا معمولی بات پر جھگڑا ہوا تو اس نے کمرے میں جاکر دروازہ بند کر کے گلے میں دوپٹے سے پھندہ ڈال کر چھت والے پنکھے سے لٹک گئی پتہ چلنے پر گھر والوں نے دروازہ توڑ کر اسے نکالا لیکن وہ جانبر نہ ہو سکی اور موت کی آغوش میں چلی گئی۔ شاہ جمال سے نمائندہ پاکستان کے مطابقپروین مائی زوجہ فیض مصطفی سیال سکنہ مو ضع بنگلہ شجراء جو کہ مرگی کی مریضہ تھی علی الصبح گھر سے دودھ لینے کے لیئے گھر سے نکلی واپسی پر مرگی کا دورہ پڑنے سے ہرنام وہ نالہ میں جا گری اور ڈوب کر جاں بحق ہو گئی معلوم ہو نے پر ورثاء اور اہل علاقہ نے اپنی مدد آ پ کے تحت کچھ فاصلہ سے ریسکیو کر لی اطلاع ملنے پر پولیس تھانہ شاہ جمال جائے وقوعہ پر پہنچ گئی نعش قبضہ میں لیکر ضروری قانو نی کاروائی کے بعد ورثاء کے حوالہ کر دی۔

حادثات

مزید : ملتان صفحہ آخر