الپوری، بنک عملیکی قرضہ لینے والے سیلاب سے متاثرہ کاروباری قرضدار پرچڑھائی

الپوری، بنک عملیکی قرضہ لینے والے سیلاب سے متاثرہ کاروباری قرضدار پرچڑھائی

الپوری(ڈسٹرکٹ رپورٹر)شا نگلہ میں بینک آف خیبر کی قرضہ لینے والے سیلاب سے متاثرہ کاروباری قرضدار پر چرھائی، بینک آف خیبر الپوری کے اہلکار اقبال شاہ کارویہ غیر شائستہ، قرضدار کاروباریوں کوہراساں کرنے کا سلسلہ شروع کردیا ہے ، قرضہ یکمشت وصول کرنا چاہتے ہیں ، ہمارے پاس اتنے رقم نہیں ہے ، قسطوار ادا کرنے کو تیار ہیں ، تاہم اقبال شاہ جو اپنا من من مانی پر اتر ائے ہیں ، کسی قسم وضاحت سننے کو تیار نہیں ،نازیبا الفاظ اور طعنے سنوانے پر تلے ہوئے ہیں۔متاثرین کی گفتگو۔ کاروباری متاثرین پریشان ، بینک آف خیبرکا قرضہ معاف بھی نہیں ہوا ۔صوبائی حکومت کے اعلان کے باوجود بینک عملہ کی قرضوں کی وصولی کیلئے شروع کی گئی مہم سیلاب سے متاثرہ کاروباری قرضداروں کو تنگ کیا جانے لگا ۔2015کے سیلاب میں کاروبار کو پانی بہا لے گیااور قرض بھی معاف کرنے کے اعلانات کئے گئے تھے تاہم شانگلہ میں بینک آف خیبر کا عملہ تین سال بعد حرکت میں آگیا ،کاروبار کیلئے قرضہ لینے والے صارفین پر چڑھائی شروع کردی ۔تین سال پہلے کاروبار سیلاب کے نذر ہوئے اب بینک آف خیبر کا عملہ نوٹس پہ نوٹس بھیج رہی ہے اور ہمارے گرینٹر کو ہراساں کیا جارہا ہے ۔ایم ڈی بینک آف خیبر صورت حال کا نوٹس لے۔اپنے بچوں سمیت بینک آف خیبر کے عملہ کے ناروا سلوک کے خلاف سڑکوں پر احتجاج کریں گے۔خیبر بینک کی جانب سے دئے گئے قرضوں کی وصولی کیلئے شروع کی گئی مہم صارفین کو تنگ کی جانے لگا شانگلہ میں آنے والے 2015کے سیلاب کے بعد صوبائی حکومت نے قرضوں کی معافی کا اعلان کیا تھا کیونکہ سیلاب کی وجہ سے شانگلہ بری طرح متاثر ہوا تھاتاہم بینک آف خیبر نے جن لوگوں کو قرضے جاری کئے اب عدم ادائیگی پر لوگوں کو ہراساں کررہے ہیں اور ان کے گارنٹی دینے والے سرکاری ملازمین کی تنخواہیں بند کی جارہی ہے ،قرضہ لینے والے صارفین کو ہراساں کرنے کا سلسلہ بند کی جائے ورنہ ہم بھرپور احتجاج کریں گے ۔انھوں نے حکومت سے اصلاح احوال کا مطالبہ کیا ہے۔۔

Back to Conversion Tool

 

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر