قربانی کے جانور افغانستان برآمد کرنے کے اجازت نامے منسوخ

قربانی کے جانور افغانستان برآمد کرنے کے اجازت نامے منسوخ
قربانی کے جانور افغانستان برآمد کرنے کے اجازت نامے منسوخ

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

پشاور (ویب ڈیسک)نگران وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا سابق جسٹس دوست محمد خان نے قربانی کے جانوروں، سبزیوں اور روزمرہ استعمال کی دیگر اشیاءکو افغانستان بر آمد کرنے کیلئے تمام اجازت نامے منسوخ کر دیئے ہیں اور کہا ہے کہ اجازت نامہ منسوخی حکم عید الاضحیٰٰ تک نافذ العمل رہے گا،خیبر پختونخوا سے باہر سمگلنگ غریب کش اقدام ہے ۔یادرہے کہ افغانستان جانور لے جانے کی وجہ سے مقامی منڈی میں قلت پید اہوجاتی ہے جس کی وجہ سے مقامی لوگ مہنگے داموں قربانی کا جانور خریدنے پر مجبور ہوجاتے ہیں۔ 

دوست محمد خان کاکہناتھاکہ مہنگائی کی اجازت نہیں دینگے،انہوں نے ضلعی انتظامیہ کو فیصلے پر حقیقی معنوں میں عملدرآمد یقینی بنانے کی ہدایت کی، یہ حکم عید الاضحیٰٰ تک نافذ العمل رہے گا،انہوں نے کہا کہ قربانی کے جانوروں اور دیگر اشیاءخوردونوش کی سمگلنگ سے مقامی مارکیٹس میں قیمتوں میں بے پناہ اضافہ ہو جاتا ہے جو غریب عوام کیلئے انتہائی تکلیف کا باعث بنتا ہے لہٰذا صوبے سے باہر سمگلنگ کے عمل کو روکنا ضروری ہے تاکہ مقامی لوگوں کی خریداری کی استعداد متاثر نہ ہونے پائے، ادھر نگران وزیر اعلیٰ دوست محمد خان نے ڈویژنل اور ضلعی انتظامیہ کو حاجی کیمپ پشاور اور اوپن مارکیٹس میں اچانک چھاپے مارنے اور احرام اور حجاج کرام کی ضروریات کی دیگر اشیا ءناقص اورمہنگے داموں فروخت کرنے والوں کے خلاف کارروائی کی بھی ہدایت کی ہے، جاری ہدایات میں نگران وزیر اعلیٰ نے چھاپہ مار ٹیمیں تشکیل دینے کا حکم دیا ہے۔

انہوں نے واضح ہدایت کی کہ حاجی کیمپ میں کسی بھی قسم کی قانون شکنی یا کوتاہی سے آہنی ہاتھوں کے ساتھ نمٹا جائے ضلعی انتظامیہ حاجی کیمپ اور مارکیٹس میں سامان کے معیار کی نگرانی یقینی بنانے کیلئے کڑی نظر رکھے حجاج کرام کو احرام اور دوسری اشیاءمطلوبہ معیار کے مطابق اورمناسب قیمتوں پر دستیاب ہونی چاہئیں، مہنگی اور اضافی قیمتوں کی اجازت نہیں ہونی چاہئے۔

مزید : علاقائی /خیبرپختون خواہ /پشاور