" یہ پورا تھانہ سپریم کورٹ میں پیش ہو " چیف جسٹس نے زرداری کے خلاف کیس میں تہلکہ خیز حکم دے دیا

" یہ پورا تھانہ سپریم کورٹ میں پیش ہو " چیف جسٹس نے زرداری کے خلاف کیس میں ...

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)جعلی بینک اکاؤنٹس سے متعلق کیس کی سماعت چیف جسٹس نے گلستان جوہر کاسارا تھانہ اورآئی جی سندھ کو کل عدالت میں طلب کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق جعلی بینک اکاؤنٹس سے متعلق کیس کی سماعت چیف جسٹس ثاقب نثار نے سپریم کورٹ میں کی ۔اس موقع پر نجی بینک کی خاتون ملازمہ نورین بھی عدالت میں پیش ہوئیں اور موقف اپنایا کہ میرے نام پرجعلی اکاؤنٹ کھولاگیا،سارادن پولیس میرے گھربیٹھی رہی اورمجھے ہراساں کیاجاتارہا۔جس پر چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ پتہ ہے کونسی پولیس نے کس تھانے میں ہراساں کیا۔بینک ملازمہ کا کہنا تھا کہ میرے گھرتھانا گلستان جوہر کی پولیس آئی تھی اور پولیس نے کہاگرفتارکرنے کاحکم ہے،نرمی برت رہے ہیں۔ایڈیشنل آئی جی نے عدالت میں موقف اپنا یا کہ ایک ارب 7 کروڑان کے اکاؤنٹ سے ٹرانسفرہوئے،میرے نوٹس میں کل آیاجس پر چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ میرے علم میں دوتین روزسے ہے،آپ ریاست کے ملازم ہیں یاحکومت کے؟کل ساراتھانہ،آئی جی سندھ حاضرہوں،ملک کوپولیس اسٹیٹ بنادیاگیا ہے،اندرون سندھ سے تعلق ہے اسی لیے وضاحت کرنےکی کوشش کررہے ہیں،آپ پولیس کااقدام درست ہونےکاجوازپیش کررہے ہیں،سیکرٹری اسٹیبلشمنٹ کوبلاکرآپ کےخلاف انکوائری کراتے ہیں۔جس پر عدالت نے آئی جی سندھ کوآدھے گھنٹے میں طلب کرتے ہوئے ریمارکس دیئے کہ آئی جی سندھ اگر اسلام آباد میں موجود ہیں تو آج ہی پیش ہوں۔

مزید : اہم خبریں /قومی /جرم و انصاف /علاقائی /اسلام آباد