جعلی بینک اکاؤنٹس کیس :چیف جسٹس کا نجی بینک کی ملازمہ کوہراساں کرنے کے معاملے کی تحقیقاتی رپورٹ دو دن میں پیش کرنے کاحکم

جعلی بینک اکاؤنٹس کیس :چیف جسٹس کا نجی بینک کی ملازمہ کوہراساں کرنے کے معاملے ...
جعلی بینک اکاؤنٹس کیس :چیف جسٹس کا نجی بینک کی ملازمہ کوہراساں کرنے کے معاملے کی تحقیقاتی رپورٹ دو دن میں پیش کرنے کاحکم

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)جعلی بینک اکاؤنٹس سے متعلق کیس کی سماعت میں نجی بینک کی ملازمہ کوہراساں کئے جانے کے معاملے پر چیف جسٹس نے آئی جی سندھ کو دو دن میں تحقیقاتی رپورٹ پیش کرنے کاحکم دیتے ہوئے کیس کی سماعت پیر تک ملتوی کر دی ۔

تفصیلات کے مطابق جعلی بینک اکاؤنٹس سے متعلق کیس کی سماعت چیف جسٹس ثاقب نثار نے سپریم کورٹ میں کی ۔اس موقع پر نجی بینک کی ملازمہ نے پولیس کی جانب سے ہراساں کئے جانے کا معاملہ اٹھایاجس پر عدالت نے آئی جی سندھ کو عدالت طلب کر لیاتھا۔ان کے حاضر ہونے پر چیف جسٹس نے استفسار کی کہ یہ کیا ہو رہا ہے آئی جی صاحب؟کیس میں بڑوں کے نام ہوں توآپکی پولیس عام لوگوں کوہراساں کرتی ہے۔آئی جی سندھ نے عدالت میں موقف اپنا یا کہ یہ کیسے ممکن ہو سکتا ہے آپکا حکم ہو اور ہم حکم عدولی کریں،سر میں یقین دلاتا ہوں غیر جانبداری کےساتھ کام کر رہے ہیں۔چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ میں جانتا ہوں کس کے کہنے پر آپکی پولیس یہ سب کر رہی ہے،انکانام بھی جانتاہوں جوہونےوالے وزیرہیں جن کے کہنے پریہ سب ہوا۔چیف جسٹس نے آئی جی سندھ کو دو دن میں تحقیقاتی رپورٹ پیش کرنے کاحکم دیتے ہوئے تنبیہ کی کہ مجھے ایماندارانہ رپورٹ تیار کر کے دیں ۔عدالت نے کیس کی سماعت پیر تک ملتوی کر دی۔

مزید : قومی /جرم و انصاف /علاقائی /اسلام آباد