چین نے امریکہ کے خلاف سب سے بڑا قدم اُٹھالیا، وہ کام کردیا کہ جان کر سعودی عرب اور ایران دونوں کی خوشی کی انتہا نہ رہے گی

چین نے امریکہ کے خلاف سب سے بڑا قدم اُٹھالیا، وہ کام کردیا کہ جان کر سعودی عرب ...
چین نے امریکہ کے خلاف سب سے بڑا قدم اُٹھالیا، وہ کام کردیا کہ جان کر سعودی عرب اور ایران دونوں کی خوشی کی انتہا نہ رہے گی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

بیجنگ(نیوز ڈیسک)امریکہ اور چین کے درمیان تجارتی جنگ تو ایک عرصے سے جاری تھی لیکن لگتا ہے کہ اب اس جنگ کا خطرناک ترین مرحلہ شروع ہو گیا ہے۔ امریکا کی جانب سے چینی مصنوعات پر پے در پے اضافی ٹیکس عائد کئے جانے کے بعد چین نے بھی بہت بڑا قدم اٹھاتے ہوئے امریکا کے خام تیل کا مکمل بائیکاٹ کر دیا ہے۔ چین کی سرکاری تیل کمپنی سائنو پیک کی ٹریڈنگ شاخ یونی پیک نے امریکہ سے خام تیل کی درآمد بند کردی ہے۔ اگرچہ یہ واضح نہیں کہ چینی کمپنی تیل کی درآمد کب تک بند رکھے گی البتہ ذرائع کا کہنا ہے کہ کم از کم اکتوبر تک یونی پیک نے امریکی خام تیل کی درآمد کی کو ئی بکنگ نہیں کروائی۔

یونی پیک اور سائنو پیک ایشیا میں امریکی خام تیل کی سب سے بڑی خریدار کمپنیاں ہیں۔ امریکہ کی جانب سے چینی درآمدات پر نئے ٹیکس لگائے جانے کے بعد بیجنگ کی جانب سے بھی امریکی توانائی مصنوعات، جن میں خام تیل اور ریفائنڈ مصنوعات شامل ہیں، کو اس فہرست میں شامل کرلیا ہے جس میں موجود اشیاءپر 25 فیصد امپورٹ ٹیکس عائد کیا جائے گا۔

رواں سال کے پہلے 8 ماہ کے دوران امریکہ سے چین درآمد کئے جانے والے خام تیل کا حجم تین لاکھ 34 ہزار 880 بیرل یومیہ تک پہنچ چکا تھا۔ چین کی جانب سے امریکی خام تیل کا بائیکاٹ کئے جانے کا مطلب یہ ہے کہ عالمی منڈی میں اچانک لاکھوں بیرل یومیہ خام تیل اضافی آ گیا ہے، اور دیگر ایشیائی ممالک کے لئے یہ ایک اچھی خبر ہے۔ چین امریکی خام تیل کا سب سے بڑا خریدار ہے، اس کی جانب سے خریداری بند کئے جانے کے بعد امریکی خام تیل کی قیمت تیزی سے گرنے لگی ہے، جس کا فائدہ ایشیاءمیں دیگر خریدار ممالک کو ملنا شروع ہو گیا ہے۔

تیل کا سب سے بڑا خریدار یعنی چین اگر امریکا سے تیل نہیں خریدے گا تو یقیناً دیگر بڑے برآمد کنندگان کا رخ کرے گا۔ اس صورتحال نے تیل پیدا کرنے والے سرفہرست ممالک سعودی عرب اور ایران کے لئے بھی نئے مواقع پیدا کر دئیے ہیں۔ تجزیہ کاروں کا کہناہے کہ آنے والے دن تیل کی عالمی تجارت کے لئے بہت اہم ہو گئے ہیں کیونکہ چین کے بڑے فیصلے نے عالمی مارکیٹ میں بہت بڑی تبدیلیاں پیدا کر دی ہیں۔

مزید : بین الاقوامی