جعلی مشروبات، بچیوں کی اموات!

جعلی مشروبات، بچیوں کی اموات!

ملک میں جعلی خوراک سے ادویات اور مشروبات تک کا کاروبار تمام تر کوشش کے باوجود بند نہیں ہو پا رہا، اس معاشرے کے یہ کردار لوگوں کی جانوں سے کھیل رہے ہیں۔ تیار کرنے اور فروخت کرنے والے سبھی ذمہ دار ہیں۔ ایک خبر کے مطابق عارف والا کے ایک نواحی گاؤں میں شادی کی تقریب تھی۔ اس دوران چار بچیوں نے ایک مقامی دکان سے سافٹ مشروب خرید کر پئے، اس سے ان بچیوں کی طبیعت خراب ہو گئی، ان کو ساہیوال ہسپتال لے جایا گیا۔ ایک بچی پہلے اور دو بچیاں اگلے روز جاں بحق ہو گئیں۔جعلی مشروبات اور خوراک کا یہ سلسلہ تمام تر کوشش کے باوجود نہیں رک سکا، اس کے لئے حالات کے مطابق فیصلہ کرنا ہو گا، ان جرائم کے لئے بھی سزائے موت دینا ہو گی، جہاں تک عارف والا کے گاؤں کی بچیوں کا تعلق ہے تو انتظامیہ نے مشروبات قبضہ میں لئے تو ان کے ٹیسٹ بھی کرائے جائیں اور جعلسازوں کو گرفتار کرکے ان کے خلاف قتل کے الزام میں کارروائی کی جائے کہ اموات واقع ہو سکیں۔

مزید : رائے /اداریہ