قربانی ایک سعادت صفائی عین عبادت

قربانی ایک سعادت صفائی عین عبادت

  

صفائی کے اچھے انتظامات پر متعلقہ اضلاع کے افسروں اور عملے کو انعام دیا جائے گا

خراب کارکردگی پر جواب طلبی کا جائے گی،عثمان بزدار

بزدار حکومت نے عیدالاضحی پر صفائی کے مثالی اقدامات کئے

وزیراعلیٰ عثمان بزدار کا عید کے روز لوکل گورنمنٹ بورڈ کمپلیکس ساندہ کا دورہ

صفائی انتظامات کا جائزہ لینے کیلئے صوبائی مانیٹرنگ سیل کا دورہ

دین اسلام ایک مکمل ضابطہ حیات ہے جوزندگی کے تمام پہلوؤں کا احاطہ کرتا ہے خواہ اس کا تعلق باطنی زندگی سے ہو یا دنیاوی زندگی سے۔قرآن وحدیث میں پاکیزگی،طہارت اور صفائی کی اہمیت پر بہت زیادہ زور دیا گیا ہے۔یہی وجہ ہے صفائی کو نصاف ایمان کہا گیا ہے۔کوئی بھی مسلمان اس وقت تک اللہ تعالی کے حضور پیش نہیں سکتا جب تک وہ پاک صاف نہ ہو۔10ذی الج کو پاکستان میں لوگوں نے سنت ابراہیمی کی پیروی کرتے ہوئے جانوروں کو قربان کیا۔صاحب حیثیت لوگوں نے اپنی اپنی حیثیت کے مطابق اللہ کی راہ میں جانور قربان کئے۔

وزیراعلی پنجاب سردار عثمان بزدار نے عیدقربان پر صوبہ بھر میں صفائی کو یقینی بنانے اور جانوروں کی آلائشوں کو فوری طور پر تلف کرنے اور انہیں ٹھکانے لگانے کے لئے صوبائی،ڈویژنل،ضلعی وتحصیل لیول کی انتظامیہ کو ہدایات جاری کیں اور خود ذاتی طور پر اس عمل کی نگرانی کی۔صوبہ بھر میں 299مویشی منڈیاں قائم کی گئیں۔کرونا کی وجہ سے اس مرتبہ منڈیاں شہر سے دو کلومیٹر دور قائم کی گئیں اور ان کے اوقات صبح سات بجے سے شام سات بجے رکھے گئے۔ان منڈیوں میں داخلے کے لئے باقاعدہ ایس او پیز جاری کئے گئے۔کوئی شخص ماسک کے بغیر داخل نہیں ہو سکتا تھا۔ عید قربان پر انتظامات کو تین مرحلوں میں تقسیم کیا گیا تھا۔ پہلے مرحلے میں لوگوں میں صفائی کی اہمیت کو اجاگر کرنا،جانوروں کی آلائشوں کو ڈالنے کے لئے بیگز تقسیم کئے گئے اور شکایات سیل قائم کئے گئے تاکہ صفائی سے متعلق شہری اپنی شکایات درج کروا سکیں۔دوسرا مرحلہ عید کے پہلے روز شروع ہوا جس کے تحت صوبہ بھر میں آپریشنل ہیلپ ڈیسک اور کنٹرول روم قائم کئے گئے،موبائل کولیکشن ٹیموں کی تشکیل اور جانوروں کی آلائشوں کو ڈمپنگ پوائنٹس پر پہنچانا شامل تھا۔تیسرا مرحلہ عید کے بعد کا تھا جس کے تحت زیرویسٹ کو یقینی بنانا،ڈمپنگ سائٹس کو بند کرنا سڑکوں کی دھلائی اور فنائل سے صوبہ بھر میں سپرے شامل تھا۔

وزیراعلی پنجاب نے عیدالاضحی پر شہروں میں صفائی کے بہترین انتظامات کرنے کی ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا کہ سالڈ ویسٹ مینجمنٹ کمپنیاں اور لوکل گورنمنٹ کے ادارے زیرویسٹ مینجمنٹ کو یقینی بنائیں۔صفائی کے انتظامات کی مانیٹرنگ کے لئے کنٹرول روم قائم کیا جائے۔مین کنٹرول روم لوکل گورنمنٹ کمپلیکس میں قائم کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ رواں برس انتظامات کو خوب سے خوب تر ہونا چاہیے۔ عوام کو صفائی ہوتی نظر آنی چاہیے۔صفائی کے بہترین انتظامات کرنے پر پہلے تین اضلاع کی حوصلہ افزائی کی جائے گی۔ لاہور اور دیگر بڑے شہروں میں کوتاہی ہر گز برداشت نہیں کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ شہریوں کو صاف ماحول فراہم کرنا حکومت کے متعلقہ اداروں کی ذمہ داری ہے۔سیکرٹری لوکل گورنمنٹ جاوید احمد قاضی نے وزیراعلی پنجاب کو صفائی پلان سے متعلق بریفنگ دی۔

وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارنے عید الاضحی کے روز لوکل گورنمنٹ بورڈکمپلیکس ساندہ کادورہ کیا۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے صفائی کے انتظامات کا جائزہ لینے کیلئے صوبائی مانیٹرنگ سیل کا معائنہ کیا۔وزیراعلیٰ نے صوبائی مانیٹرنگ سیل میں صوبہ بھر میں عید الاضحی پر صفائی کیلئے کیے جانیوالے انتظامات کا مشاہدہ کیا۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار کی زیر صدارت اعلی سطح کا اجلاس منعقد ہوا۔صوبائی سیکرٹری بلدیات نے لاہور سمیت پنجاب بھر میں صفائی کیلئے کیے جانیوالے انتظامات کے بارے میں بریفنگ دی۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے ویڈیو لنک پر مختلف شہروں کی انتظامیہ سے گفتگو کی اورصفائی کے انتظامات کے بارے میں ضروری ہدایات دیں۔انہوں نے کہا کہ عید الاضحی پر شہروں کو صاف ستھرا رکھنا ہم سب کی قومی ذمہ داری ہے۔صفائی کے اچھے انتظامات پرمتعلقہ اضلاع کے افسروں اورعملے کو انعام دیا جائے گا۔خراب کارکردگی پر جواب طلبی ہوگی۔وزیراعلیٰ عثمان بزدارنے لاہور سمیت پنجاب بھر میں صفائی کے بہترین انتظامات یقینی بنانے کی ہدایت دیتے ہوئے کہا کہ آلائشوں کو بروقت اٹھایا جائے اور مناسب طریقے سے ٹھکانے لگایا جائے۔ سڑکوں یا گلی محلوں میں آلائشیں نظر نہیں آنی چاہئیں۔ لاہور سمیت تمام شہر صاف ستھرے ہونے چاہئیں۔انہوں نے کہا کہ سالڈ ویسٹ مینجمنٹ کمپنیاں،متعلقہ ادارے اورانتظامیہ صفائی انتظامات کو ہر قیمت پر یقینی بنائیں۔ صفائی کے انتظامات گزشتہ برس کے مقابلے میں بہتر ہونے چاہئیں۔ متعلقہ اداروں کے افسران صفائی کے انتظامات کی خود مانیٹرنگ کریں۔ انہوں نے کہا کہ صفائی کے انتظامات کو خوب سے خوب تر بنانے کیلئے تمام وسائل بروئے کار لائے جائیں۔صفائی کے بارے میں شہریوں کی شکایات پر فوری طور پر کارروائی کی جائے۔ صفائی کے انتظامات کی خود نگرانی کررہا ہوں - غفلت یا کوتاہی پرایکشن ہوگا۔ انہوں نے کہاکہ محکمہ بلدیات کی استعداد کار بڑھا رہے ہیں۔نئے بلدیاتی الیکشن کی طرف جارہے ہیں۔نئے بلدیاتی نظام سے عوام حقیقی معنوں میں بااختیار ہوں گے۔بلدیاتی نظام سے عوام کے مسائل نچلی سطح پر حل ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ لاہور میں نئی لوکل گورنمنٹ اکیڈمی بنائیں گے۔افسران صفائی کے انتظامات کی مانیٹرنگ کیلئے خودفیلڈ پر موجود رہیں۔تبدیلی واضح طورپر نظر آنی چاہیے۔انہوں نے کہا کہ عوام کی خدمت سے بڑھ کرکوئی اورترجیح نہیں۔

وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار کی ہدایات پرعید الاضحیٰ کے دوران پنجاب کے تمام شہروں اوردیہی علاقوں کو صاف رکھنے کے لیے خصوصی انتظامات کیے گئے جن کے تحت پاکستان تحریک انصاف کے عوامی نمائندوں کی سربراہی میں صحت و صفائی کا بہترین انتظام یقینی بنایا گیا پنجاب کے وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان نے عید کے پہلے اور دوسرے دن راولپنڈی کے مختلف علاقوں میں صفائی کے کام کی نگرانی کی راولپنڈی ویسٹ مینجمنٹ کمپنی کے ایم ڈی اویس منظور تاڑر نے شہر کے مختلف حصوں میں آلائشیں اٹھانے اور کوڑا کرکٹ تلف کرنے کے کام کا جائزہ لیا۔ فیاض الحسن چوہان نے کہا کہ اس مرتبہ پنجاب میں صفائی کے اعلی انتظامات کئے گئے ہیں جن کی وجہ سے قربانی کے جانوروں کی آلائشیں جمع کرنے میں مدد ملی اور کسی بھی مقام پر تعفن پید ا نہیں ہوا۔انہوں نے بتایا کہ راولپنڈی میں عید الاضحی کی تعطیلات کے دوران مجموعی طور پر 9000ٹن سے زائد سالڈ ویسٹ جمع کرکے ڈمپنگ اسٹیشن تک پہنچایا گیا جس کے لیے ٹیمیں تشکیل دی گئی تھی اور صفائی آپریشن کو مکمل کرنے کے لیے گاڑیاں مخصوص کی گئی تھیں۔ڈپٹی کمشنر راولپنڈی کیپٹن ریٹائرڈ انوارالحق نے بھی عید کے پہلے اور دوسرے دن راولپنڈی کے مختلف حصوں کا دورہ کرکے سولڈ ویسٹ مینجمنٹ ادارے کی کارکردگی کا جائزہ لیا۔

وزیر اعلیٰ پنجاب کی ہدایت پر لاہور ڈویژن میں عید الاضحی گرینڈ صفائی آپریشن میں قربانی کے جانوروں کی تقریباً ساڑھے پینسٹھ ہزار ٹن آلائشوں کو کولیکشن کے بعد ٹھکانے لگایا گیاہے۔ لاہور شہر میں 54 ہزار ٹن، ضلع شیخوپورہ میں ساڑھے پانچ ہزار ٹن، ضلع ننکانہ صاحب میں 3100ٹن جبکہ ضلع قصور میں 3ہزار ٹن آلائشوں کو ٹھکانے لگایا گیا۔ لاہور ڈویژن میں موصول ہونے والی 8889 شکایات کا فوری طور پر ازالہ کیا۔ لاہور میں شکایات ازالہ کی شرح 95 فیصد رہی ہے۔ عید کے تینوں دنوں میں انتظامیہ مکمل طور پر متحرک اور فعال رہی۔ آلائشوں کو اٹھانے کے بعد کئی علاقوں میں عرق گلاب کا چھڑکاو بھی کیا گیا جبکہ آلائشوں کو ماحولیاتی تحفظ کے قواعد کے مطابق دفن کیا گیا۔ لاہور میں 3400 پک اپ گاڑیوں، 311 کیمپوں اور 119 عارضی کولیکشن سنٹرز کے جامع انتظامات کے تحت صفائی آپریشن پوری ڈویژن کی طرح اطمینان بخش رہا ہے۔

لاہور ویسٹ مینجمنٹ کمپنی کی جانب سے شہر میں عیدالضحی کے حوالے سے خصوصی صفائی آپریشن کیا گیا۔ قربانی کے جانوروں کی54 ہزار ٹن سے زائد آلائشیں کامیابی سے ٹھکانے لگائیں۔جانوروں کی آلائشوں کو بہترین حکمت عملی جس میں مجموعی طور پر 3400 سے زائد وہیکلز بشمول پک اپس، 119عارضی طور پر قائم ویسٹ کلیکشن اینڈ ٹرانسفر سٹیشنز،293 عید کیمپوں کا قیام شامل تھا، کی مدد سے اکٹھا کیا گیا۔ عید کے تیسرے روزلکھوڈیر ڈمپنگ پوائنٹ سمیت ۴ پوائنٹس پر ماحول دوست طریقے سے زمین میں دفن کر کے مٹی و چونے سے ڈھک دیا گیا۔ایل ڈبلیوایم سی نے عید کے اختتام پر شہر میں قائم اجتماعی قربان گاہوں، عارضی کلیکشن پوائنٹس اور مویشی منڈیوں میں زیرو ویسٹ آپریشن بھی کیا جبکہ جامع مساجد، عید گاہوں، قربان گاہوں کی ڈس انفیکٹنٹ سے خصوصی دھلائی کی گئی جس کے بعد عرق گلاب اور چونے کا بھی استعمال کیا گیا۔ صوبائی وزراء صحت ڈاکٹر یاسمین راشد، صوبائی وزیر ہاؤسنگ میاں محمود الرشید، چئیرمین ایل ڈبلیو ایم سی اور ایم ڈی ایل ڈبلیوا یم سی عید الاضحی کے تینوں روز عید کیمپ، ویسٹ کلیکشن سنٹر اور ڈمپنگ پوائنٹس کا دورہ کرتے رہے اور جاری سرگرمیوں کا جائزہ لیا۔

سرگودھا ڈویژن کے چاروں اضلاع میں عید الاضحی کے تین ایام میں ایک اندازے کے مطابق 9ہزار ٹن قربانی کے جانوروں کی آلائشوں کو ٹھکانے لگایا گیا۔سرگودہا‘ خوشاب‘ بھکر اور میانوالی میں مجموعی طورپر 12سو گاڑیاں او رمشینری استعمال میں لائی گئی۔ اس کے علاوہ25سو سینٹری ورکرز‘ سوکے قریب ٹرالیاں‘ 25 ڈمپر اور 2ہزار سے زائد ہتھ ریڑھیاں استعمال میں لائی گئیں۔ چاروں اضلاع میں عید الاضحی کے تینوں ایام میں صفائی آپریشن صبح 5بجے سے رات گئے تک بغیر کسی وقفہ کے جاری رہا۔ صفائی کے حوالے سے شکایات کے فوری ازالے کیلئے چاروں اضلاع میں کنٹرول روم قائم کئے گئے۔ کنٹرول روم اور سوشل میڈیا پر موصول ہونے والی شکایات کو دو گھنٹوں میں حل کیا گیا۔

عید الالضحی کے تین دنوں میں ساہیوال ڈویژن سے 3257 ٹن آلائشین اٹھائی گئیں جس کے لئے میونسپل اداروں کی ٹیموں نے تینوں یوم شفٹون میں دن رات کام کیا۔ تفصیلات کے مطابق ساہیوال میونسپل کارپوریشن نے 2325 ٹن آلائشین اٹھائیں جس کے لئے 25 کولیکشن پوائنٹس بنائے گئے تھے۔ ضلع اوکاڑہ میں 1390 ٹن آلائشین اٹھائی گئیں جن میں 700 ٹن اوکاڑہ، 440 ٹن دیپال پور اور 250 ٹن رینالہ خود جبکہ ضلع پاکپتن سے542 ٹن آلائشونکو ٹھکانے لگایا گیا جن میں 322 ٹن عارف والا اور220 ٹن پاکپتن سے اکٹھا کیا گیا۔ عید کے تمام دن میونسپل اداروں نے کنٹرول رومز بھی قائم کئے جہاں وصول ہونے والی شکایات کو فوری دور کیا گیا۔

ڈی جی خان میں ویسٹ مینجمنٹ کمپنی نے عید کے ایام کے دوران 2600ٹن آلائشوں کو ٹھکانے لگایا. شہریوں کو 25000کے قریب پلاسٹک بیگز دیئے گئے. کمپنی کے 490عملہ اور 80گاڑیوں نے عید آپریشن میں حصہ لیا. میونسپل کمیٹی کوٹ چھٹہ میں 66ٹن آلائشیں اٹھائی گئیں جن میں تحصیل کونسل کی حدود میں 20ٹن، ایم سی چوٹی سے دس ٹن اور ٹاون کمیٹی سخی سرور سے دس ٹن آلائشیں اٹھائی گئیں۔تحصیل ڈیرہ غازیخان میں میٹروپولیٹن کارپوریشن کے عملہ نے 423ٹن ویسٹ اٹھایااور موصول شدہ 15عوامی شکایات کو نمٹا دیا گیا۔ مظفرگڑھ شہر سے عید ایام کے دوران 139ٹن آلائشوں کو تلف کیاگیا. 12ٹریکٹر ٹرالیوں، 63ہاتھ ریڑھیوں اور 208ملازمین نے عید آپریشن میں حصہ لیا. ضلع لیہ کی میونسپل کمیٹی نے چار ٹرالیوں، 20لوڈر رکشوں اور 130عملہ نے عیدآپریشن میں حصہ لیا. ایم سی چوبارہ میں 19، کروڑ میں 55، ٹاون کمیٹی کوٹ سلطان میں 11، فتح پور میں 35اور چوک اعظم میں 40صفائی عملہ نے حصہ لیا.شکایات سیل میں موصول شدہ تمام درخواستیں کارروائی کے بعد نمٹا دی گئیں۔مجموعی طو رپر صفائی کی صورتحال تسلی بخش رہی. سیاسی رہنماؤں، سماجی حلقوں او ر عوام نے صفائی عملہ کی کوششوں کو سراہا۔ملتان شہر میں بروقت صفائی کے لئے 2400 ورکرز کی فورس اور 450 کے لگ بھگ گاڑیاں فیلڈ میں موجود رہیں جب کہ انتظامی افسران بھی نگرانی پر مامور ہیں۔واضح رہے کہ عید کے پہلے روز شہر سے 12 ہزار 541 ٹن آلائشوں کو اٹھایا گیا جبکہ عید کے پہلے دو دنوں میں مجموعی طور پر9 ہزار ٹن ویسٹ اٹھایا گیا۔ پہلے دو دنوں میں شکایات سیل میں مجموعی طور پر 1667شکایات موصول ہوئیں۔ عید کے موقع پر شکایات نمٹانے کی شرح99 فیصد رہی۔خانیوال میں پہلے اور دوسرے دن ضلع میں 26 ہزار 700 مویشی قربان کئے گئے لوکل گورنمٹس کے صفائی اسکواڈز نے ان ایام کے دوران 4.568 میٹرک ٹن آلائشیں اٹھاکر ایس او پیز کے مطابق ٹھکانے لگا دیں۔ ضلع وہاڑی میں کل 575 سینٹری ورکرز، 17 عدد ٹریکٹر ٹرالیاں، 6 ٹریکٹر بمعہ لوڈر، 05عدد ٹریکٹر بمعہ فرنٹ بلیڈ، 22رکشہ لوڈر، 01عدد ہینو لفٹر کنٹینر، 01عدد ٹریکٹر بمعہ کنٹینر کو استعمال میں لایاگیا. آلائشیں اکٹھی کرنے کیلئے 88پوائنٹس بنائے گئے جبکہ 20ہزار شاپنگ بیگز تقسیم کئے گئے۔ عید الاضحی کے تینوں دن کے دوران 1000ٹن سے زائد آلائشیں اکٹھی کرکے ٹھکانے لگائی گئیں -لودھراں میں 700 ٹن آلائشیں ٹھکانے لگائیں گئی۔

ضلع بھر میں 12 ھزار شاپنگ بیگ تقسیم کیے گئے جبکہ آلائشیں اٹھانے کے لیے 100 گاڑیاں تین دن تک متحرک رہیں۔ضلع فیصل آباد میں ویسٹ مینجمنٹ کمپنی اورمیونسپل کمیٹیز نے عیدالاضحی کے تین ایام میں 20ہزار ٹن سے زائدقربانی کے جانوروں کی الائشیں اکٹھی کرکے ڈمپنگ سائٹس پر تلف کی گئیں۔عید صفائی آپریشن میں تقریبا دو ہزار گاڑیوں،لوڈر رکشہ،ڈمپرز،شاول ودیگر مشینری استعمال کی گئی جبکہ 5ہزار سے زائد ویسٹ ورکرز نے صفائی مہم میں حصہ لیا۔

ضلع جھنگ میں عیدالاضحی صفائی آپریشن کے دوران 1340ٹن الائشوں کو اٹھا کر ٹھکانے لگایا گیا۔ ضلع ٹوبہ ٹیک سنگھ میں عیدالاضحی صفائی آپریشن کے دوران1270 ٹن الائشوں کو اٹھا کر ٹھکانے لگایا گیا۔ضلع بھر میں صفائی آپریشن پر مامور350 سے زائد ویسٹ ورکرز نے گلی محلوں سے الائشیں عارضی ٹرانسفر سٹیشن منتقل کیں جبکہ انہیں شہر سے باہر بنائی گئی خندق میں تلف کردیا گیا۔ضلعی انتظامیہ کے افسران سمیت ارکان اسمبلی نے ضلع بھر میں عیدالاضحی صفائی پلان کی مکمل نگرانی جاری رکھی۔ضلع چنیوٹ میں عیدالاضحی صفائی آپریشن کے دوران2525 ٹن الائشوں کو اٹھا کر ٹھکانے لگایا گیا۔ضلع بھر میں صفائی آپریشن پر مامور 400 کے قریب ویسٹ ورکرز نے گلی محلوں سے الائشیں عارضی ٹرانسفر سٹیشن منتقل کیں۔ جہلم سے مجموعی طور پر 1923آلائشیں اور سالڈ ویسٹ جمع کر کے محفوظ طریقے سے ڈمپنگ سائٹ تک پہنچایا گیا۔ ضلع چکوال سے مجموعی طور پر4سو ٹن آلائشیں اور سالڈویسٹ جمع کر کے محفوظ طریقے سے ڈمپنگ سائٹ تک پہنچایا گیا۔ عید قربان کے موقع پر ضلع بہاول پور میں صفائی کی بہترین صورتحال کو یقینی بنانے اور قربانی کے جانوروں کی باقیات کو شہر سے باہرڈمپنگ سائٹ پر منتقل کرنے کے لیے بہاول پور ویسٹ مینجمنٹ کمپنی کے 900سے زائدافسران،سینیٹری انسپکٹرز،ڈرائیورز اور سینیٹری ورکرز پر مشتمل سٹاف عید الاضحی کے تینوں ایام میں فرائض انجام دیتا رہا۔

تفصیلات کے مطابق عید الاضحٰی کے موقع پربہاول پور شہر میں بی ڈبلیو ایم سی کی جانب سے 40 سے زائد عید کیمپس لگائے گئے جہاں لوگوں میں جانوروں کی آلائشوں کو منتقل کرنے کے لیے فری ویسٹ بیگز کی فراہمی سمیت کمپنی کی102 سے زائدآپریشنل گاڑیوں نے مجموعی طور پر630 ٹرپس کے زریعے 2400 ٹن سے زائد جانوروں کی آلائشیں اور باقیات شہر سے باہر منتقل کیں جنہیں ماحولیاتی تقاضوں کو مد نظر رکھتے ہوئے ڈمپ کیا گیا۔بعد ازاں آلائشوں سے پاک کیے گئے علاقوں میں چونا ڈالا گیا تاکہ علاقے تعفن اور غلاظت سے پھیلنے والی بیماریوں سے محفوظ رہیں۔ مزید براں شہریوں کو کرونا وائرس سے محفوظ رکھنے کے لیے شہر میں جراثیم کش سپرے بھی کیا گیا۔ نیزعوامی شعور بیدار کرنے کے لیے شہربھر میں بھرپو انداز میں آگاہی مہم بھی چلائی گئی۔آگاہی مہم کے دوران شہریوں میں گھر گھر83 ہزار سے زائد پلاسٹک ویسٹ بیگز اور2 لاکھ آگاہی پمفلٹس بھی تقسیم کیے گئے اور ان پمفلٹس کے ذریعے تمام سپروائزی اور آپریشنل اسٹاف کے موبائل نمبرز بھی فراہم کیے گئے تاکہ لوگوں کو کمپنی سٹاف تک باآسانی رسائی حاصل ہو سکے۔بی ڈبلیو ایم سی کا مرکزی دفتر عید کے تینوں دن کھلا رہا اور کمپنی ہیلپ لائن 1139 مکمل طور پر فعال رہی اور کمپنی کا عملہ عوامی خدمت کے لیے چوبیس گھنٹے موجود رہا۔ ہیلپ لائن 1139،وٹس ایپ نمبر،کمپنی مینجمنٹ اور سپروائزری سٹاف کوعید کے تینوں ایام میں مجمو عی طور پر2560 سے زائد کالز موصول ہوئیں جن پر فوری ایکشن لیتے ہوئے تمام شکایات کا فوری ازالہٰ کیا گیا۔

٭٭٭

مزید :

ایڈیشن 1 -