معاون خصوصی کا 330ملین لاگت سے زیرتکمیل ڈسٹرکٹ جیل ہنگوکا معائنہ

معاون خصوصی کا 330ملین لاگت سے زیرتکمیل ڈسٹرکٹ جیل ہنگوکا معائنہ

  

پشاور(سٹاف رپورٹر)وزیر اعلی خیبر پختونخوا کے معاون خصوصی برائے جیل خانہ جات تاج محمد ترند نے بدھ کے روز330 ملین روپے کی لاگت سے قریب تکمیل ڈسٹرکٹ جیل ہنگو کا معائنہ کیا۔ اس موقع پرایم پی اے شاہ فیصل خان اور ایم پی اے ظہور شاکرکے علاوہ آئی جی جیل خانہ جات مسعودالرحمان سمیت تمام متعلقہ افسران اور کنٹریکٹرز بھی ان کے ساتھ تھے۔ایگزیکٹو انجینئر سی اینڈ ڈبلیو ہنگو نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ 400 قیدیوں کی گنجائش رکھنے والے ڈسٹرکٹ جیل ہنگو کے منصوبے کی تعمیر 2009 میں 161 ملین روپے کی لاگت سے شروع ہوئی۔2011 میں پہلی کاسٹ ریویژن ہوئی جو 265 ملین روپے تھی۔2017 میں سیکنڈ کاسٹ ریویژن ہوئی جو 330 ملین روپے تھی۔ انہوں نے بتایا کہ اب جیل کا زیادہ تر کام مکمل ہے اور باقی کام اکتوبر 2020 میں مکمل ہو جائیگا۔اسی طرح انہوں نے انکشاف کیا کہ کنٹریکٹرز اب تک تمام کام 2009 کے ریٹس پر کررہے ہیں۔اس کے بعد معاون خصوصی نے جیل کے مختلف حصوں کا معائنہ کیا۔انہوں نے کچھ خامیوں کی نشاندہی کرکے انہیں درست کرنے کی ہدایت کی۔تاج محمدترند نے کہا کہ وہ اکتوبرمیں دوبارہ یہاں آئیں گے اوراس وقت تک جیل کے بقیہ تمام کام مکمل ہونے چاہئیں۔ تاج محمد ترند نے ایکسیئن سی اینڈ ڈبلیو کو ہدایت کی کہ جیل کی تکمیل کے تمام دستاویزات اورخط وکتابت رولز کے مطابق بروقت مکمل ہونی چاہیے تاکہ عمارت کی تکمیل کے بعد اس کوکھولنے میں مزید تاخیر کے امکانات پیدا نہ ہوں۔ قبل ازیں معاون خصوصی نے اورکزئی ہیڈ کوارٹر میں واقع اورکزئی جیل کامعائنہ کیا۔انہوں نے قیدیوں سے فراہم کی جانے والی سہولیات اوران کو درپیش مسائل کے بارے میں معلومات حاصل کیں اورانتظامیہ کو ہدایت کی کہ ان شکایات کا فوری ازالہ کیاجائے۔اسی طرح جیل پولیس نے بھی معاون خصوصی کی خدمت میں بعض ضروری سہولیات کی فراہمی کی گزارش کی۔انہوں نے یہ سہولیات جلدفراہم کرنے کیلئے متعلقہ افسران کوہدایت کی۔اورکزئی ہیڈکوارٹر اورڈسٹرکٹ جیل پہنچنے پرمعاون خصوصی کو پولیس کے چاک وچوبند دستوں نے سلامی پیش کی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -