باڑہ، لشمینیا کے مریضوں میں اضافہ، الرٹ جاری

باڑہ، لشمینیا کے مریضوں میں اضافہ، الرٹ جاری

  

باڑہ (نمائندہ پاکستان) محکمہ صحت ضلع خیبر میں لیشمینیا کے بڑھتے ہوئے مریضوں کو مد نظر رکھتے ہوئے الرٹ جاری کر دیا ہے.اور اس سلسلے میں ضلع خیبر کے تینوں تحصیلوں کے بڑے ہسپتالوں کو لشمینیا انجیکشن ہنگامی بنیادوں پر فراھم کر دیئے ہیں.اس سلسلے میں ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر طارق حیات نے ڈوگرہ ہسپتال وزٹ کے دوران صحافیوں کو تفصیلات دیتے ہوئے بتایا.کہ گزشتہ چند سالوں سے ضلع خیبر کے مختلف علاقوں سے لشمینیا مریض رپورٹ ہوئے ہیں ان میں ہر سال اضافہ ہوتا رہا. تحصیل باڑہ میں لشمینیا کے مریض سب سے زیادہ رپورٹ ہوئے.لشمینیا انجیکشن مہنگا ہونے اور لاعلمی کی وجہ سے لوگ بروقت علاج کے لئے ہسپتال جانے کی بجائے گھریلو ٹوٹکے استعمال کرتے ہیں.ناکام ہونے کی صورت میں ہسپتال سے رجوع کرتے ہیں.ڈوگرہ ہسپتال ریکارڈ کے مطابق رواہ ماہ 56 مریض رپورٹ ہوئے ہیں.جبکہ رواں سال جنوری تا اگست 570 پانچ سو ستر مریض رجسٹرڈ ہوئے جبکہ اب تک 9ہزار ایک سو بارہ مریضوں کا علاج ہو چکا ہے.انہون نے کہا کہ عوام کو اب پشاور اور پرائیویٹ ہسپتالوں میں مہنگے علاج کروانے کی بجائے اپنے قریبی سرکاری ہسپتالوں میں علاج اور ادویات مفت دستیاب ہیں ہسپتال میں لشمینیا تشخیص اور علاج مفت کیا جاتا ہے. علاج شروع ہوتے ہی مریضوں کا باقاعدہ وقتا فوقتا مانیٹرنگ کی جاتی ہے.انہون نے مزید بتایا کہ انسداد لشمینیا کے لئے پروگرام ترتیب دے دیا ہے.جن علاقوں سے مریض زیادہ رپورٹ ہوئے ہیں.یا جن علاقوں میں مذکورہ مچھر کے اثرات ہیں.ان علاقوں میں فوگ سپرے اور دیگر ادویات کا استعمال کرکے علاقے سے اس مرض کا صفایا کریں گے.واضح رہے کہ ڈوگرہ ہسپتال میں لشمینیا مریضوں کے لئے کیمو تھراپی اور تھرمو تھراپی مشین کی سہولت بھی موجود ہے.جس کے ذریعے لشمینیا مریض کا علاج کیا جاتا ہے.

مزید :

پشاورصفحہ آخر -