سی سی پی او لاہور سے امن کمیٹی کے علماء‘متولیوں، آرگنائزرز کی ملاقاتیں

سی سی پی او لاہور سے امن کمیٹی کے علماء‘متولیوں، آرگنائزرز کی ملاقاتیں

  

لا ہو ر (کر ائم رپو رٹر)سربراہ لاہور پولیس ذوالفقار حمید کی زیر صدارت کینٹ ڈویژن اور سول لائنز کی امن کمیٹی کے شیعہ علماء، متولیوں اور آرگنائزرز سے ملاقاتیں کیں، ملاقات میں ڈی آئی جی آپریشنز لاہور اشفاق احمد خان، ایس ایس پی آپریشنز فیصل شہزاد، ایس پی سیکیورٹی لاہور بلال ظفر، ایس پی کینٹ قرقان بلال، ایس پی سول لائنز رضا صفدر کاظمی سمیت متعدد افسران نے بھی شرکت کی۔ ملاقات میں امن کمیٹی کے سید جاوید بخاری، عارف حسین شاہ، عابد ہاشمی، سید قمر عباس سمیت متعدد متولیوں اور آرگنائزر نے بھی شرکت کی، میٹنگز میں محرم الحرام کے سلسلہ میں کینٹ ڈویژن اور سول لائنز ڈویژن محرم الحرام کے دوران مجالس، جلوسوں کی سیکیورٹی کی صورتحال کا تفصیلی جائزہ لیا گیا، سی سی پی او لاہور ذوالفقار حمید نے متولیوں، شیعہ علماء اور دیگر ممبران سے محرم الحرام کے حوالے سے تبادلہ خیال کرتے ہوئے انہیں حکومتی گائیڈ لائنز بارے آگاہ کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ تمام مجالس، جلوس حکومتی گائیڈ لائنز کے مطابق ہونگے۔ امام بارگاہوں، مجالس اور جلوسوں کی سیکیورٹی و سیفٹی پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوگا۔ امام بارگاہوں، مجالس اور جلوسوں کے روٹس پر روف ٹاپ ڈیوٹی، جامعہ تلاشی اور کورونا ایس او پیز پر عملدرآمد کیلئے نفری تعینات کی جائے گی۔ مجالس اور جلوس کے روٹس اور وقت کا خاص خیال رکھا جائے اور جلسے، جلوسوں کے راستوں میں مناسب لائٹس کا بندوبست کیا جائے جبکہ حکومتی گائیڈ لائنز کے پیش نظر آرگنائزر، متولی مجالس اور جلوس میں ماسک اور سماجی فاصلوں پر سختی سے عملدرآمد کروائیں گے، ان کا مزید کہنا تھا کہ سینی ٹائزر، مناسب فاصلہ رکھتے ہوئے کورونا وبائسے محفوظ رہا جاسکتا ہے۔ انہوں نے تمام ڈویعنل ایس پیز، ایس ڈی پی اوز اور ایس ایچ اوز کو ہدایت کی کہ شیعہ علماء، امن کمیٹیوں اور انتظامیہ سے میٹنگز کرکے باہمی مشاورت اور مل بیٹھ کر مسائل کو حل کرنے کے ساتھ ساتھ چھوٹے چھوٹے مسائل کو تھانہ لیول اور ڈویڑن لیول پر حل کریں۔ کسی بھی مسئلہ کی صورت میں فوری امن کمیٹی، پولیس اور انتظامیہ کو اطلاع دیں۔ سربراہ لاہور پولیس کا مزید کہنا تھا کہ ایس پی کینٹ الائیڈ محکموں سے میٹنگ کریں اور تمام آرگنائزرز، متولیوں کو حکومتی گائیڈ لائنز فراہم کریں۔ مجالس اور جلوسوں میں بغیر تلاشی کسی کو داخل نہ ہونے دیا جائے گا اور مجالس اور جلوس میں داخلے کیلیے صرف ایک ہی پوائنٹ سے انٹری کروائی جائے گی۔ مجالس اور جلوسوں میں عبادات اور رسومات کی ادائیگی میں کم سے کم زائرین اور عزارداروں کو دعوت دی جائے۔ محرم الحرام میں شرپسند عناصر پر کڑی نظر رکھی جائے تاکہ نقص امن کا باعث بننے والوں سے سختی نمٹا جائے گا،

مزید :

علاقائی -