اضافی بیرکوں کی تعمیر کیلئے 30,30ملین روپے مختص کئے گئے ہیں، زوارحسین

اضافی بیرکوں کی تعمیر کیلئے 30,30ملین روپے مختص کئے گئے ہیں، زوارحسین

  

لاہور(کر ائم رپو رٹر)صوبائی وزیر جیل خانہ جات پنجاب زوار حسین وڑائچ نے محکمہ جیل خانہ جات کی دو سالہ کارکردگی پر سیر حاصل گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار کے احکامات کے مطابق پنجاب کی 09جیلوں میں کورٹ رومز کے قیام اور 13جیلوں میں 10000قیدیوں کو ایڈجسٹ کرنے کے لیے اضافی بیرکوں کی تعمیر کے لیے 30،30ملین روپے مختص کئے گئے ہیں۔ٹیوٹا کی مدد سے 16095 اسیران کو پیشہ وارانہ تربیت دی گئی ہے پنجاب حکومت کی جانب سے جیلوں میں کوویڈ۔19 سے نبٹنے کے لیے بروقت اقدامات کئے گئے ہیں انھوں نے کہا کہ پنجاب حکومت اور مخیر حضرات کے تعاون سے جرمانہ،دیت،دمن اور عرش کی ادائیگی کے بعد 1717قیدی رہا ہوئے پنجاب پروبیشن اور پیرول سروس ایکٹ کا نفاذ،نئے قانون''پیرول ایکٹ ''2020''،موجودہ پروبیشن آرڈیننس مجریہ 1960 میں ترامیم کی پنجاب کابینہ سے منظوری اور ڈی جی پنجاب پروبیشن اینڈ پیرول سروس کے آفس کی تعمیر کے لیے 120ملین رقم کی منظوری شامل ہیں۔صوبائی وزیر نے کہا کہ نئی ڈسٹرکٹ جیل لودھراں اور ہائی سیکورٹی جیل میانوالی کو فنکشنل کیا گیا ہے ساہیوال میں پنجاب جیل خانہ عملہ ٹریننگ کالج کا تقریبا 95فیصد کام مکمل ہو گیا ہے۔تمام جیلوں میں 1200روم آئر کولر اور 156واٹر چلر فراہم کئے گئے۔جیلوں میں سرور فاؤنڈیشن کے تعاون سے 100سلائی مشینیں مہیا کی گئیں۔انھوں نے کہا کہ ڈسٹرکٹ جیل لاہور میں 100بیڈ کاہسپتال کا قیام عمل میں لایا گیا ہے۔پنجاب کی 32جیلوں میں لائبریرز کی اپ گریڈیشن،تعلیم کے فروغ کے لیے خواندگی مراکز اور یوٹیلیٹی سٹور قائم کئے گئے ہیں۔زوار حسین وڑائچ نے مزید کہا کہ وزیر اعظم کی ہدایت پر جیلوں میں بنک کیش کاونٹر بنانے گئے ہیں وزیر اعلی پنجاب کی خصوصی ہدایات کے مطابق آئی جی جیل خانہ جات کے آفس میں کمپلینٹ اینڈ مانیٹرنگ سیل،موبائل ایپ کا آغاز اور تمام جیلوں میں شکایات کے ازالے کے لیے شکایت بکس رکھ دیا گیا ہے۔

مزید :

علاقائی -