ریحان شیخ سٹینڈرڈ چارٹرڈ بینک کے چیف ایگزیکٹو بن گئے

ریحان شیخ سٹینڈرڈ چارٹرڈ بینک کے چیف ایگزیکٹو بن گئے

  

کراچی(پ ر)اسٹینڈرڈ چارٹرڈ بینک(پاکستان) لمٹیڈ نے آج تصدیق کی ہے کہ ریحان شیخ نے بینک کے نئے چیف ایگزیکٹو آفیسر کے طور پر شمولیت اختیار کر لی ہے۔اْن کی تقرری کا اعلان تمام ضروری انضباطی منظوریوں کے بعد کیا جا رہاہے۔ریحان شیخ، بینکاری میں،35برس سے زیادہ کا تجربہ رکھتے ہیں اور  دبئی، متحدہ عرب امارات،میں اسٹینڈرڈ چارٹرڈ، اسلامی بینکنگ کے سابق  چیف ایگزیکٹو آفیسر کی حیثیت سے فرائض انجام دے رہے تھے۔ریحان شیخ کی اعلیٰ صلاحیتوں میں؛ کاروبار کی ترقی، مواقع کی نشاندہی اور اعلیٰ کارکردگی کی حامل ٹیموں کی تیاری شامل ہیں۔ وہ کثیرالتہذیبی ماحول میں ٹیموں کی تیاری،انہیں  ترغیب دینے اور کاروباری اہداف کے حصول میں بھی اپنی صلاحیتوں کا مظاہرہ کر چکے ہیں۔ اِس تقرری پر تبصرہ کرتے ہوئے اسٹینڈرڈ چارٹرڈ بینک کے ریجنل چیف ایگزیکٹو آفیسر، افریقہ اینڈ مڈل ایسٹ، سنیل کوشل نے کہا:”پاکستان میں اسٹینڈرڈ چارٹرڈ کی طویل اور کامیاب تاریخ کے ساتھ، ہم  اپنے کلائنٹس کو اعلیٰ ترین معیار کی خدمات، پروڈکٹس اور سولوشنز پیش کرنے کی بہترین پوزیشن میں ہیں۔ ریحان کی قیادت اور تجربہ، پاکستان میں ہمارے  کلائنٹس کے ساتھ تعلقات کو مزید گہرا اور مضبوط بنائے گااوروہ، افریقہ و مڈل ایسٹ ریجن کی انتہائی اسٹریٹجک مارکیٹوں میں سے ایک میں، ہمارے مقاصد کے حصول میں اہم کردار ادا کریں گے۔“

ریحان، پاکستان اور بین الاقوامی سطح پر،سینئر منیجمنٹ اور بینکاری کے ہر پہلو کا وسیع تجربہ رکھتے ہیں اور اِس سے قبل امیریکن ایکسپریس بینک (پاکستان) کے ہیڈ آف کارپوریٹ بینکنگ اور اسٹینڈرڈ چارٹرڈ بینک پاکستان کے ہیڈ آف کارپوریٹ بینکنگ سمیت کئی ممتاز اداروں میں کام کر چکے ہیں۔ سنہ 2015ء  میں، اسٹینڈرڈ چارٹرڈ میں بطور سی ای او اسلامی بینکاری، دوبارہ شمولیت سے قبل، انہوں نے دبئی اسلامی بینک، متحدہ عرب امارات میں بھی کئی سال گزارے۔

 اپنے نئے عہدے  پر تبصرہ کرتے ہوئے اسٹینڈرڈ چارٹرڈ پاکستان کے نئے چیف ایگزیکٹو، ریحان شیخ نے کہا:”اسٹینڈرڈ چارٹرڈ کے لیے پاکستان ہمیشہ ایک اہم مارکیٹ رہا ہے۔ اِس ملک کی ترقی کے مضبوط عزم کے ساتھ،ہماری وسیع مقامی معلومات،  اور نیٹ ورک کو استعمال کرتے ہوئے، ہم اس مارکیٹ میں دستیاب مواقع کی بناء پر، کاروبار کو بڑھانے کے لیے منفرد پوزیشن میں ہیں۔ میرے لیے، ذاتی طور پر، یہ ایک زبردست موقع ہے کہ میں اپنے ملک واپس آکر، ٹیم کے ہمراہ  اس مضبوط فرنچائیز کو ترقی دیتے ہوئے،معزز کلائنٹس اور پاکستان کے وسیع تر مفاد کے لئے کام کروں۔“

مزید :

کامرس -