پیک فرینزسماجی سرگرمیوں اور خوشیاں بانٹنے میں پیش پیش 

پیک فرینزسماجی سرگرمیوں اور خوشیاں بانٹنے میں پیش پیش 

  

لاہور (پ ر)کوویڈ19  کے باعث عالمی سطح پر پیدا ہونے والے بحران کے پیش نظر، پاکستان کے صف اول کے برانڈ پِیک فر ینز نے اپنے قومی تشخص کا فائدہ اٹھاتے ہوئے لاکھوں پاکستانیوں تک پہنچنے کے لئے لاتعداد سی ایس آر اقدامات اٹھائے۔ ''خوشی پھیلائیں،'' کے عنوان سے جدید ٹی وی سی کا مقصد اپنے سامعین کے ساتھ مثبت روابط استوارکرناہے اس کے ساتھ ساتھ خوشی پھیلانے کی اپنی 50 سالہ روایت کو بر قرار رکھنا بھی ے۔65 سیکنڈ کا ٹی وی سی خوشی اور مسرت کی داستان پیش کرتا ہے جو لوگوں کی زندگیوں کو معنی خیز انداز میں چھو لیتا ہے۔ اس وبائی امراض کے باعث درپیش چیلنجز نے پوری قوم کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے۔اس مہم کا بنیادی مقصد لوگوں کی زندگیوں میں چھوٹی چھوٹی خوشیاں بانٹناہے۔ یہ مہم برانڈ کی قدروں اور وابستگیوں کا اعادہ کرتی ہے اور امید کرتے ہیں یہ لوگوں میں مثبت سوچ پھیلانے میں اپنا کردار ادا کرے گی۔ انگلش بسکٹ مینوفیکچررز (ای بی ایم) نے پیک فریئنز کے تحت 350 ملین کی نقد رقم ڈونیشن، طبی سامان کے ساتھ ساتھ راشن اور ریلیف ڈرائیو کی صورت میں متاثر ہونے والی علا قوں کے لئے عطیہ کیا ہے۔ڈائریکٹر بزنس ڈیولپمنٹ  ای بی ایم، شاہ زین منیر نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ ”پچاس سال سے زائدعرصہ سے، ہماری بیکنگ آرٹسٹری کے ساتھ ساتھ پاکستانیوں کی محبت نے ہمیں بلندیوں تک پہنچایا ہے۔ ہمیں یقین ہے کہ یکجہتی کے اس جذبے سے ہی ہم ہر چیلنج کو فتح کرنے میں کامیاب ہوتے ہیں اور سامنے آنے میں مضبوطی سے ہماری مدد کرتے ہیں“۔ اس وائرس کے پھیلاؤ کے باعث، ای بی ایم نے وزیر اعظم کے کویڈ ریلیف فنڈ اور دیگر قابل ذکر خیراتی اداروں کے لئے اپنی عطیات جاری رکھی ہوئی ہے۔

 اپریل میں کمپنی نے ایئرو ویو کو ختم کرکے اپنے بجٹ کو وائرس سے متاثرہ افراد کو ریلیف فراہم کرنے کی سمت منتقل کرنے کا فیصلہ کیا۔ عوام میں امید اور مثبت جذبات پیدا کرنے کے لئے،انگلش بسکٹ مینوفیکچررز (ای بی ایم)  نے ایک پبلک سروس میسج بھی لانچ کیا تھا جس سے لوگ اپنے پیاروں کو وائرس سے بچانے کے لئے احتیاط برتنے کی تلقین کریں۔

مزید :

کامرس -