پنجاب میں انڈسٹریز اور فیکٹریوں کو پورا ہفتہ 24گھنٹے کام کرنیکی اجازت، کورونا سے مزید 21اموات، فعال کیسز کی تعداد 20836ہو گئی 

    پنجاب میں انڈسٹریز اور فیکٹریوں کو پورا ہفتہ 24گھنٹے کام کرنیکی اجازت، ...

  

 لاہور،اسلام آباد(سٹاف رپورٹرز،نیوز ایجنسیاں) پنجاب میں کورونا وائرس کی صورتحال بہتر ہونے پر صنعتوں کے اوقات کار بڑھادیے گئے۔سیکرٹری پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کیئر نے صنعتوں کے اوقات کار بڑھانے کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا جس کے مطابق تمام انڈسٹریاں اورفیکٹریاں پورا ہفتہ 24 گھنٹے کام کرسکیں گی اور تعمیرات سے متعلقہ تمام شعبہ جا ت اور کاروبار بھی پورے ہفتہ کام کریں گے۔سیکرٹری ہیلتھ محمد عثمان نے کہا کہ ایس او پیز پر عمل درآمد کرتے ہوئے کاروبار کھولنے کی اجازت دی گئی ہے لہٰذا حفاظتی تدابیر اختیار نہ کرنیوالے کاروبار فوراً بند کر دیے جائیں گے۔ نوٹیفکیشن کا اطلاق فوری طور پر آج سے ہوگا البتہ حکومت پنجاب کی جانب سے لگائی گئی گزشتہ پابندیاں اسی طرح نافذ عمل رہیں گی۔دریں اثنا ء صوبائی وزیر تعلیم مراد راس کا کہنا تھا پنجاب میں کورونا وائرس کی صورتحال کنٹرول ہوجانے پر سکول 15ستمبر سے کھول دیے جائیں گے، اس ضمن میں ایس او پیز مکمل طور پر تیار ہیں۔ پنجاب کے وزیر تعلیم مراد راس نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے مزید کہا کہ سکول کھلنے کا دارو مدار کورونا وبا پر قابو پانے کی صورت میں ممکن ہے۔ ایس او پیز کے حوالے سے والدین کو جلد آگاہ کیا جائیگا، 15ستمبر سے پہلے سکول کھلنے کی تمام تر خبریں بے بنیاد ہیں۔دوسری طرف وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کی زیر صدارت ہونیوالے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ ملک بھرکے تعلیمی ادارے 15 ستمبرکو ہی کھولے جائیں گے۔اسلام آباد میں شفقت محمود کی زیر صدارت انٹر پروونیشنل آن لائن ویڈیو کانفرنس ہوئی جس میں تمام صوبوں کے وزراء اور سیکرٹری تعلیم شریک ہوئے۔کانفرنس میں تعلیم کے حوالے سے اہم مسائل سمیت تعلیمی ادارے کھولنے پر مشاورت کی گئی۔اس حوالے سے وزیر تعلیم سندھ سعید غنی کے ترجمان کا کہنا تھاکہ متفقہ فیصلے کی روشنی میں سندھ میں بھی سکول 15ستمبر سے ہی کھلیں گے۔اجلاس میں خیبر پختونخوا حکومت نے یکم ستمبر سے سکول کھو لنے کی تجویزدی لیکن اس تجویز کو دیگر تمام صوبوں نے مستردکردیا۔ 15ستمبر سے قبل سندھ میں کسی کو سکول کھولنے کی اجازت نہیں، اس تاریخ سے قبل سکول کھولنے والوں کیخلا ف قانونی کارروائی کی جائیگی۔کانفرنس میں ملک بھر میں یکساں نصاب پر بھی مشاورت کی گئی اور فیصلہ کیا گیا کہ تمام صوبے یکساں نصاب سے متعلق اپنی تجاویز سے جلد آگاہ کریں۔

انڈسٹری اجازت

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر، نیوز ایجنسیاں) ملک میں کورونا کیسز اور اموات کی تعداد میں بتدریج کمی کا سلسلہ جاری ہے، گزشتہ 24 گھنٹوں میں ملک بھر میں کرونا وائرس کے 21مریض جاں بحق ہوئے۔نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے کرونا کے تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق ملک میں کورونا کے فعال کیسز کی تعداد 20ہزار 836ہو گئی ہے۔ کورونا وائرس کے مصدقہ مر یضو ں کی تعداد 2لاکھ 81ہزار 136ہو چکی ہے، جن میں سے 2لاکھ 54ہزار 286مریض صحت یاب ہو چکے ہیں، 872مریضوں کی حالت تشویشناک ہے، جبکہ کورونا سے ہونیوالی اموات کی کل تعداد6020ہو چکی ہے۔سندھ میں ایک لاکھ 22ہزار 16 کیسز رپورٹ ہو چکے ہیں، پنجاب میں 93 ہزار 571، خیبر پختونخوا میں 34 ہزار 324  کیسز، اسلا م آباد میں 15 ہزار 122  کیسز، گلگت بلتستان میں 2218، بلوچستان میں 11780 کیسز، آزاد کشمیر میں 2105 مصدقہ کیسز رپورٹ ہو چکے ہیں۔سندھ میں 2231 مریض جاں بحق ہوئے جبکہ پنجاب میں 2157 مریض، خیبر پختونخوا میں 1213، اسلام آباد میں 167 کرونا مریض، بلوچستان میں 136، گلگت بلتستان میں 55 مریض اور آزاد کشمیر میں تاحال وائرس سے 55 مریض جاں بحق ہو چکے ہیں۔این سی او سی کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں میں ملک بھر میں 11 ہزار 915  ٹیسٹ کیے گئے، ملک بھر میں تاحال 20 لاکھ 43 ہزار 870 کورونا ٹیسٹ کیے جا چکے ہیں۔ ملک بھر کے 735 اسپتالوں میں کورونا کے 1381 مریض زیر علاج ہیں جبکہ کورونا مریضوں کیلئے مختص 1859 وینٹی لیٹرز میں سے 165 زیر استعمال ہیں۔

کورونا اموات

مزید :

صفحہ اول -