کشمیری بھائیوں کو کسی صورت میں تنہا نہیں چھوڑ سکتے: گورنر سندھ 

    کشمیری بھائیوں کو کسی صورت میں تنہا نہیں چھوڑ سکتے: گورنر سندھ 

  

 کراچی(اسٹاف رپورٹر) گورنرسندھ عمران اسماعیل نے کمشنر کراچی کی جانب سے منعقدہ کردہ کشمیر ریلی کے موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ فیڈریشن،حکومت، اپوزیشن، اور ہر شعبہ زندگی سے تعلق رکھنے والا فرد آج ایک پیج پر ہے کیونکہ پاکستانیوں کے دل اپنے کشمیری بھائیوں کے ساتھ دھڑکتے ہیں وہ انھیں کبھی بھی کسی بھی صورت میں تنہا نہیں چھوڑ سکتے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ بھارت نے کشمیر کو دنیا کی سب سے بڑی جیل بنایا ہوا ہے لیکن افسوس سے کہنا پڑتا ہے کہ جس طرح کے ردعمل کی عالمی برادری سے توقع تھی وہ نہیں آیا،انہوں نے سوال کیا کہ کیا کشمیر میں انسان نہیں بستے؟ کیا ان کے جوانوں کی لاشوں پر انسانوں کے دل نہیں روتے ہیں؟۔ انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ میں وزیراعظم نے کشمیر کا مقدمہ بھرپور انداز میں  پیش کیا، وہ کشمیر کا سفیر بن کر دنیا بھر میں کشمیر کا پیغام پہنچا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم سب کشمیر کے ساتھ کھڑے ہیں اس مسئلہ پر ہم میں کوئی دورائے نہیں پائی جاتی، جتنی بھی جماعتیں ہیں وہ کشمیر کے معاملہ پر ایک ساتھ ہیں اور یہ ایک مضبوط پیغام بھارت کے لئے ہے کہ وہ طاقت کے ساتھ کشمیریوں کو توڑ نہیں سکتا۔ انہوں نے کہا کہ آج بھارت ایک کمزور جبکہ پاکستان ایک مضبوط موقف کے ساتھ کھڑا ہے سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ بھارت عالمی میڈیا، امریکی  سینٹرز اور بھارتی اپوزیشن کے رہنماؤں کو مقبوضہ کشمیر جانے سے کیوں رو ک رہا ہے؟ اس کا مطلب ہے کہ بھارتی غاصب افواج نے وہاں ظلم و بربریت کا بازار گرم کیا ہوا ہے اس وقت بھارت پر مودی اور اس کی ہندودتوا سوچ قابض ہے جو بھارت کے ٹکرے کرنے پر لگے ہوئے ہیں۔ گورنرسندھ نے ریلی کے شریک شرکاء کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ میں سب کا مشکور ہوں جو یہاں جمع ہو کر پوری دنیا کو کشمیر سے یکجہتی کا اظہار کررہے ہیں۔ ریلی سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا کہ کشمیر کے معاملہ پر ہم سب ایک ہیں، بھارت کے غاصبانہ قبضہ کے خلاف پاکستانی قوم ایک پیج پر ہیں آج کشمیر کا مقدمہ مضبوط ہوگیا ہے ہم بھارت کے جبر و تسلط کی شدید مذمت کرتے ہیں اور اپنے کشمیری بھائیوں کو بتادینا چاہتے ہیں کہ ہم سب ان کے ساتھ کھڑے ہیں۔ وزیراعلیٰ نے ریلی میں شرکت پر گورنر سندھ کا شکریہ بھی ادا کیا۔

کراچی(اسٹاف رپورٹر) گورنرسندھ عمران اسماعیل نے کراچی سے سکھر ”یوم استحصال کشمیر ٹرین مارچ“کے شرکاء کو کینٹ اسٹیشن سے الوداع کیا۔اس موقع پرا راکین اسمبلی، عمائدین شہر اور مختلف شعبہ ہائے  زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد کی بڑی تعداد موجود تھی۔شرکاء ہاتھوں میں کشمیر کا پرچم تھامے بھارتی غاصبانہ قبضہ اور مظالم کے خلاف نعرے بازی کررہے تھے۔گورنرسندھ ٹرین مارچ کے شرکاء سے ملاقات کی اور ان کے جذبہ کا سراہا۔ بعد ازاں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے گورنرسندھ نے کہا کہ آج کا ٹرین مارچ اس بات کی غمازی کرتا ہے کہ 5 اگست کے کے بھارتی اقدامات  کے خلاف پوری پاکستانی قوم متحد ہے کیونکہ پاکستانی قوم جانتی ہے کہ بھارت، انسانی اقدار کو پامال کرتے ہوئے کشمیر پر مظالم ڈھا رہا ہے ظلم و ستم کے شکار اپنے کشمیر ی بھائیوں سے اظہار یکجہتی کے لئے پوری قوم اپنے کشمیری بھائیوں کے ساتھ کھڑی ہے یقین سے  کہہ رہا ہوں کہ ظلم و ستم کی سیاہ رات کے خاتمہ کا وقت قریب آچکا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ یوم استحصال کشمیر کے موقع پر سیاسی، مذہبی جماعتوں اور مختلف مکاتب فکر کے افراد ایک پیج پر ہیں آج ہر شخص سراپا احتجاج ہے گلیوں، سڑکوں اور شاہراہوں پر کشمیری بھائیوں سے اظہار یکجہتی کا زبردست مظاہرہ دیکھنے کو مل رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کو اپنی قرار دادوں کے مطابق کشمیر کے مسئلہ کا دیرپا حل نکالنا ہوگا،وزیراعظم عمران خان کشمیر کے سفیر بن کر بھارتی مظالم کو پوری دنیا میں اجاگر کررہے ہیں وزیراعظم نے واضح کردیا ہے کہ پوری دنیا میں کشمیر کا مقدمہ لڑیں گے۔انہوں نے کہاکہ 5اگست کو بھارت نے کشمیر کی شناخت چھیننے کی کوشش کی اور کشمیر میں کورونا کی آڑ میں کشمیریوں پر عرصہ حیا ت تنگ کیا جارہا ہے۔

مزید :

صفحہ اول -