پاکستانی عوام بہت جلد یوم فتح کشمیر منائیں گے، نظریہ پاکستان ٹرسٹ

        پاکستانی عوام بہت جلد یوم فتح کشمیر منائیں گے، نظریہ پاکستان ٹرسٹ

  

 لاہور(لیڈی رپورٹر) بھارت زیادہ دیر تک فوجی طاقت کے ذریعے کشمیریوں کی تحریک آزادی کو نہیں دبا سکتا اور انہیں جلد آزادی کی نعمت ملے گی۔ کشمیریوں کی تحریک آزادی ضرور کامیاب ہو گی۔ آج ہم یو م استحصال منا رہے ہیں لیکن بہت جلد یوم فتح منائیں گے۔ ان خیالات کا اظہار مقررین نے بھارت کی طرف سے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کے ایک سال مکمل ہونے پر ”یوم استحصال“ کی خصوصی آن لائن نشست کے دوران کیا۔ کارروائی نظریہئ پاکستان ٹرسٹ کے فیس بک پیج اور یو ٹیوب چینل پر دکھائی گئی۔ نشست کے آغاز پر قاری عبدالماجد نور نے تلاوت اور حافظ مرغوب احمد ہمدانی نے نعت رسول مقبولؐ سنانے کی سعادت حاصل کی۔ تحریک پاکستان کے کارکن اورسابق صدرو چیئرمین نظریہئ پاکستان ٹرسٹ محمد رفیق تارڑ نے اپنے صدارتی خطاب میں کہا کہ کشمیریوں کا جوش جہاد بڑھتا جا رہا ہے۔ مسئلہ کشمیر جلد حل ہو گا اور مسلمانان کشمیر ہمارے ساتھ شامل ہو کر پاکستان کا حصہ بنیں گے۔ اللہ تعالیٰ نے بھی کشمیر کو پاکستان کا حصہ بنایا ہے۔ کشمیر کے سارے راستے، دریا اور ندی نالے پاکستان کو آتے ہیں۔ صدر آزاد جموں وکشمیر سردار مسعود خان نے اپنے خطاب میں کہا کہ مقبوضہ جموں وکشمیر پر مکمل قبضے اور محاصرے کے ایک سال کے دوران بھارتیہ جنتا پارٹی اور راشٹریہ سوایم سیوک سنگھ نے مقبوضہ اور متنازعہ علاقے کو فوجی حملے اور عسکری کارروائیوں کے ذریعے بھارتی ریاست کا زبردستی حصہ بنانے کیلئے غیر قانونی اور مجرمانہ اقدامات کیے ہیں۔ بھارت کی یہ جرأت کے اس نے آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان کو اپنے جعلی نقشوں میں بھارتی ریاست کا حصہ دکھایا ہے۔یہ خطے غازیوں اور شہیدوں کے لہو سے آزاد ہوئے ہیں۔ پچھلے دو ماہ میں ہندوستان بھر سے چالیس ہزار ہندوؤں کو لا کر کشمیر میں آبادکاری کی اجازت دی گئی ہے۔ ہم دنیا کی بہاادر ترین کشمیری قوم کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں کہ اس غاصبانہ قبضے اور دہشتگردی کے باوجود وہ اپنی جدوجہد آزادی اور مزاحمت جاری رکھے ہوئے ہیں۔ کشمیریوں نے بھی یہ قسم اٹھائی ہے کہ وہ بھارتی حملے کو پسپا کریں گے۔ وزیراعظم آزاد جموں وکشمیر راجہ فاروق حیدر نے اپنے خطاب میں کہا کہ 5اگست2019ء کے اقدام کا مقصد کشمیریوں سے ان کی شناخت اور کلچر چھیننے کا ایک طریقہ ہے۔بھارت یاد رکھے ریاست جموں وکشمیر آپ کیلئے ترنوالہ ثابت نہیں ہو گا۔کشمیری بھارت کی سازش کو سمجھ گئے ہیں کہ ان کی زمینوں پر قبضے اور شناخت کو چھیننے کی کوشش ہو رہی ہے۔سینیٹ کی سٹینڈنگ کمیٹی برائے دفاع کے چیئرمین سینیٹر ولید اقبال نے اپنے خطاب میں کہا کہ پاکستان نے ایک سال میں کشمیر کا مقدمہ بھرپور انداز میں دنیا کے سامنے پیش کیا ہے۔ دنیا پاکستان کی آواز کو سن رہی ہے۔ کشمیری بہت جلد بھارتی تسلط سے نجات حاصل کریں گے۔ سابق وزیر خارجہ خورشید محمود قصوری نے اپنے خطاب میں کہا کہ  بھارت زیادہ دیر تک فوجی طاقت کے ذریعے کشمیریوں کی تحریک آزادی کو نہیں دبا سکتا اور انہیں جلد آزادی کی نعمت ملے گی۔ایڈووکیٹ جنرل پنجاب احمد اویس نے اپنے خطاب میں کہا کہ ایک سال قبل غیر آئینی اقدام کے ذریعے مقبوضہ کشمیر کو بھارت کا حصہ بنانے کی کوشش کی۔یہ اقدام نہ صرف بین الاقوامی قوانین اور یواین کے چارٹر کے منافی ہے بلکہ خود بھارتی قوانین کی بھی نفی ہے۔ پاکستانی قوم کشمیریوں کے ساتھ کھڑی ہے۔سابق مشیرحکومت پنجاب محمد اکرم چودھری نے اپنے خطاب میں کہا کہ ہم فلسفہ جہاد سے پیچھے ہٹ گئے ہیں۔ ظالم کوظلم کرنے سے ہاتھ سے روکنا افضل ترین جہاد ہے۔ چیئرمین نیشنل ریفارمز موومنٹ بریگیڈیئر (ر) نادر میر نے اپنے خطاب میں کہا کہ بھارت اب آزادکشمیر پر حملہ کرنے کی تیاری کر رہا ہے، ایسا لگتا ہے کہ بھارت نے مسئلہ کشمیر کے پرامن حل کا راستہ بند کر دیا ہے۔ ہماری نظر اور منزل سرینگر ہے۔

جلد یوم فتح

مزید :

صفحہ آخر -