قتل کی دھمکیاں، بوگس چیک، فراڈ،544مقدمات زیر تفتیش، افسربرہم

  قتل کی دھمکیاں، بوگس چیک، فراڈ،544مقدمات زیر تفتیش، افسربرہم

  

 ملتان (وقا ئع نگار) ملتان پولیس کے تھانیداروں کی من مانیاں بڑھ گئیں۔ضلع بھر  میں ضرر۔قتل کی دھمکیاں۔(بقیہ نمبر27صفحہ6پر)

بوگس چیک اور فراڈ کے 544 زیر تفتیش مقدمات ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔جس ہر ریجنل پولیس آفیسر بھڑک اٹھے۔ملتان  ڈویثرن کے چاروں اضلاع کے ضلعی پولیس سربراہان کو 10 اگست تک زیر تفتیش مقدمات کو فوری طور پر یکسو کرنے کی ہدایت جاری کردی ہے۔ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ ملتان سمیت چاروں اضلاع خانیوال۔لودھراں۔وہاڑی کے تفتیشی افسران کے بارے میں اس بات کا انکشاف ہوا ہے۔کہ انہوں نے قتل کی دھمکیاں۔ضرر۔بوگس چیک اور جعلی کاغذات تیار کرکے فراڈ کرنے کے جرم کے تحت درج مقدمات کو تاحال پینڈنگ رکھا ہوا۔جسں پر آر پی او مہر وسیم احمد سیال نے سخت ناراضگی کا اظہار کیا ہے۔اس حوالے سے انہوں نے مذکورہ چاروں اضلاع کے ڈسٹرکٹ پولیس سربراہان کو ہدایت کی ہے کہ وہ 10 اگست تک اپنے اپنے متعلقہ اضلاع کے مذکورہ جرم کے زیر تفتیش مقدمات کو جلد از جلد یکسو کریں۔اور اسکی رپورٹ فوری پر دفتر بھیجوائیں۔اور ساتھ ہی اسکو پی ایس آر ایم ایس میں انٹری کروائیں۔ار پی او ملتان کی ہدایت پر ایس ایس پی انوسٹی گیشن ملتان نے ضلع بھر کے تھانوں میں تقریبا 544 زیر تفتیش مقدمات کی لسٹ تیار کی یے۔جس پر عمل درآمد کیلئے ڈویثرنل ایس پیز  کو بھجوا دیا گیا ہے۔جاری لسٹ کے مطابق  ضلع میں اس وقت ضرر کے 248۔قتل کی دھمکیوں کے 47۔بوگس چیک کے 215 اور بوگس کاغذات تیار کرکے فراڈ کرنے پر مجموعی طور پر 34 مقدمات درج ہوئے ہیں۔طے شدہ میعاد کے مطابق مقدمات یکسو نہ ہونے پر ذمے داروں کے خلاف سخت محکمانہ کاروائی عمل میں لائی جائیگی۔

من مانیاں 

مزید :

ملتان صفحہ آخر -