پلاٹ کیس، شریک ملزم میاں نواز شریف کے وارنٹ گرفتار جاری

پلاٹ کیس، شریک ملزم میاں نواز شریف کے وارنٹ گرفتار جاری

  

لاہور(نامہ نگار)احتساب عدالت کے جج اسد علی نے غیر قانونی پلاٹ الاٹمنٹ کیس میں گرفتار جنگ اور جیو گروپ کے ایڈیٹرانچیف میر شکیل الرحمن کے جوڈیشل ریمانڈ میں 20اگست تک توسیع کردی جبکہ کیس میں شریک ملزم سابق وزیراعظم میاں نواز شریف کے قابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کر دیئے ہیں،،فاضل جج نے میر شکیل الرحمن کو پیش نہ کرنے پر دوران سماعت ریمارکس دیئے کہ ایسے تو کیس نہیں چلے گا کہ پر پیشی پر کوئی کارروائی نہ ہو سکے، آئندہ سماعت پر پھر اس کو بطور خصوصی کیس تصور کریں،کیس کی سماعت شروع ہوئی تو فاضل جج نے استفسار کیا کہ میر شکیل کیوں نہیں آئے؟سپیشل پراسیکیوٹر نیب حارث قریشی نے عدالت کو بتایا کہ کورونا ایس او پیزکی وجہ سے ملزموں کو عدالتوں میں پیش نہیں کیا جا رہا اور اسی کے تحت ملزم میر شکیل الرحمن کو بھی پیش نہیں کیا گیاہے،فاضل جج نے کہا کہ ریفرنس دائر ہونے کے بعد یہ تیسری سماعت ہے مگر میر شکیل الرحمن کو پیش نہیں کیا گیاہے،متعلقہ حکام آئندہ سماعت پرمیر شکیل کو عدالت میں پیش کرنے کے لئے انتظامات مکمل کریں، سپیشل پراسکیوٹر نے عدالت سے استدعا کی کہ اس کیس میں شریک ملزم میاں نواز شریف کے قابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کئے جائیں، فاضل جج نے کہا کہ میاں نواز شریف کی طلبی کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ملزم دیئے گئے ایڈریس پر موجود نہیں ہے جبکہ تعمیلی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ نواز شریف لندن میں موجود ہے، عدالت نے نیب کے پراسیکیوٹر کی استدعا منظور کرتے ہوئے میاں نواز شریف کے قابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کرتے ہوئے میرشکیل الرحمن کے جوڈیشل ریمانڈ میں 20اگست تک توسیع کردی ہے،گزشتہ روز سماعت کے موقع پرعدالتی طلبی پر ملزم سابق ڈی جی ایل ڈی اے ہمایوں فیض رسول اور سابق ڈائریکٹر لینڈ ڈویلپمینٹ بشیر احمد عدالت میں پیش ہوئے، ملزم ہمایوں فیض رسول کی طرف سے نوید رسول مرزا اورملزم میاں بشیر احمد کی طرف سے میاں الیاس ایڈووکیٹس نے وکالت نامہ جمع کروادیاگیا۔

وارنٹ گرفتاری

مزید :

صفحہ اول -