واجبات ادائیگی،متعدد ریلوے پھاٹک بند،مسائل میں اضافہ

واجبات ادائیگی،متعدد ریلوے پھاٹک بند،مسائل میں اضافہ

  

ملتان(سٹاف رپورٹر)کروڑوں روپے کے واجبات کی عدم ادائیگی پر ریلوے ملتان ڈویژن میں قومی و صوبائی ہائی ویز سمیت دیگر محکموں کی طرف سے ریلوے لائن عبور کرنے کے لئے لگائے گئے 120 سے زائد ریلوے پھاٹک عرصہ دراز سے بند ہیں جبکہ 80 سے زائد پھاٹکوں پر واجبات کی ادائیگی کے لئے ریلوے کی جانب سے پینافلیکس لگائے گئے ہیں۔ معلومات کے مطابق ریلوے کی جانب سے متعلقہ اضلاع کے کمشنر، ڈپٹی کمشنر، سیکرٹری تعمیرات و ورکس(بقیہ نمبر2صفحہ6پر)

، ایکسین، ایس ڈی او ہائی ویز سمیت تمام متعلقہ محکموں اور ان کے سربراہاں کو متعدد مرتبہ مراسلے بھجوائے جا چکے ہیں جن میں سال ہا سال سے سڑکوں پر موجود ریلوے پھاٹکوں کے مالک متعلقہ محکموں سے کہا گیا ہے کہ وہ ریلوے پھاٹکوں کی مرمت، دیکھ بھال اور وہاں پر تعینات ملازمین کی تنخواہوں کی مد میں سالانہ واجبات کی ادائیگی کویقینی بنائیں بصورت دیگر یہ پھاٹک ٹریفک کے لئے بند رہیں گے۔ اس سلسلہ میں نادہندہ ریلوے پھاٹکوں پر ادائیگی نہ ہونے کے بینرز بھی آویزاں کئے گئے ہیں۔ ملتان میں شیرشاہ ریلوے پھاٹک کا آدھا حصہ گزشتہ کئی سالوں سے بند ہے، اسی طرح انڈسٹریل اسٹیٹ کے داخلی راستے نادرآباد چوک کے قریب پھاٹک کو چند روز قبل بند کرنے کے بعد کھول دیا گیا تاہم اس پھاٹک پر بینر ابھی آویزاں ہے۔ ملتان شہر کے دیگر پھاٹکوں پر بھی یہی صورتحال ہے۔ ذرائع کے مطابق ریلوے ملتان ڈویژن نے مختلف محکموں کی طرف سے ریلوے لائن کراسنگ کے لئے بنوائے گئے 200 سے زائد ریلوے پھاٹکوں کی مد میں 55 کروڑ روپے سیزائد کے بقایاجات وصول کرنا ہیں جبکہ پنجاب ہائی ویز ایم اینڈ آر ڈویژن ملتان نے اپنے تمام اضلاع خانیوال، لودھراں، ملتان،وہاڑی میں موجود 79 ریلوے پھاٹکوں کی سالانہ مرمت و دیکھ بھال کی مد میں 27 کروڑ روپے سے زائد کی ادائیگی کرنا ہے۔ ریلوے انتظامیہ نے دعوی کیا ہے کہ ہر صورت نادہندگان سے وصولیوں کو یقینی بنایا جائیگا۔ دوسری جانب شہریوں کا کہنا ہے کہ پھاٹک ہماری گزرگاہ ہیں جن کی بندش کے خلاف کئی مرتبہ احتجاج بھی کر چکے ہیں، پھاٹک بند ہونے کی وجہ سے ہمیں دور دراز کا سفر کرنا پڑتا ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ سرکاری محکموں کے باہمی لین دین کے تنازعہ نے عوام کو ذرائع آمدورفت کے بنیادی حق سے محروم کر رکھا ہے۔ شہریوں نے وزیر اعظم پاکستان، وزیر ریلوے اور وزیراعلی پنجاب سے بند ریلوے پھاٹک کھلوانے کا مطالبہ کیا ہے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -