گرمی، جس، بجلی پھر گھنٹوں بند، سکولوں میں بچے بیہوش، والدین کا احتجاج 

گرمی، جس، بجلی پھر گھنٹوں بند، سکولوں میں بچے بیہوش، والدین کا احتجاج 

  

  بوریوالا،راجن پور،  کوٹ ادو(ڈسٹرکٹ رپورٹر،تحصیل رپورٹر) مون سون کے ہونے والی مسلسل بارشوں کے بعد شدید گرمی دوبارہ لوٹ آئی ہے اور شدید گرمی کے ساتھ حبس کا بھی راج ہے،گرمی بڑھتے ہی واپڈا نے بھی اپنے رنگ دکھانا شروع کر دیے،پرمٹ کے نام پر کئی کئی گھنٹے بجلی بند رہنا معمول بن گیا،کئی کئی گھنٹے بجلی بندش سیبچے،بوڑھے،خواتین گرمی سے نڈھال ہونے لگے جبکہ خواتین کو خانہ داری میں (بقیہ نمبر12صفحہ6پر)

 بھی مشکلات کا سامنارہا،بجلی کی غیر اعلانیہ  بندش سے عوام الناس سمیت مریض، بچے بوڑھے، عورتیں شدید گرمی کے باعث نڈھال ہوگئے جبکہ کاروبار مفلوج ہوکررہ گئے ہیں،نورشاہ طلائی سمیت اکثر دیہی علاقوں میں بجلی کاتمام دن غائب رہنامعمول بن گیاہے جبکہ سٹی سمیت شہرکے ملحقہ علاقوں لائن پار،بخاری روڈ،محلہ گانمن شاہ،محلہ نورے والہ مشوری والا،تونسہ موڑ،مویشی منڈی روڈ،نقدآبادسمیت کئی علاقوں میں 10سے12گھنٹے کی غیر اعلانیہ طویل فورس لوڈ شیڈنگ کی جارہی ہے جسکی وجہ سیصارفین انتہائی پریشانی کاشکار ہیں،صارفین نیحکومت سے مطالبہ کیا کہ بجلی کی طویل فورس لوڈ شیڈنگ کاسلسلہ ختم کیاجائے،بصورت دیگر شہری واپڈاآفس کاگھیراکرنے پر مجبورہو جائیں گے بجلی کی غیراعلانیہ طویل بندش،سخت گرمی میں پنکھے نہ چلنے اورپینے  کے پانی کابندوبست نہ ہونے کے باعث نجی پرائیویٹ سکول میں متعددطلبا وطالبات نڈھال اور بے ہوش ہو گئے،کوٹ ادوشہرریلویروڈپرقائم پرائیویٹ پبلک سکول(دانش پبلک سکول)میں بجلی کامتبادل انتظام نہ ہونے پرشدیدگرمی اورحبس سے 4بچے بے ہوش ہوگئیجبکہ کئی بچینڈھال بھی ہوگئے،سکول میں گرمی سے بے ہوش ہونے والی چھٹی کلاس کی طالبہ کے دادا غلام عباس بھٹہ نے کہا کہ سرکاری سکولوں سمیت پرائیوٹ تعلیمی اداروں میں یو پی ایس،سولر سسٹم،جنریٹر یا دوسرا کوئی متبادل نظام نہیں ہیراجن پور میں موسم تبدیل ہوتے ہی دس سے 16 گھنٹے کی بدترین لوڈشیڈنگ شروع ہو گئی شہری بچے، بوڑھے اور خواتین گرمی سے بلبلا اٹھیں شہریوں نے واپڈا آفیسران کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ واپڈا آفیسران کا جب دل کرتا ہے بجلی بند کر دیتے ہیں ظلم دیکھیں شہروں میں دس، دس گھنٹے اور دیہات میں 16، 16 گھنٹے کی لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے شدید گرمی سے بچوں اور خواتین کا برا حال ہے ایک تو بجلی کی قیمتوں میں روزانہ اضافہ دوسرا اتنی لوڈشیڈنگ، انہوں نے چیف جسٹس آف پاکستان سے اس لوڈشیڈنگ کا نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہیبورے والا میں گیس کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ جاری ہے جس شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے عملہ کی مبینہ ملی بھگت سے بورے والا کی گیس بند کرکے عارف والا کو فراہم کی جارہی ہے جس پر مجاہد کالونی کے رہائشیوں ڈاکٹر محمد سرور۔ سید ہارون شاہ ایڈوکیٹ۔محمد احسان جٹ۔منیر رندھاوا۔نواز رندھاوا۔رشید احمد۔خورشید احمد۔شہباز بھٹہ۔محمود بھٹی۔باو دلشاد احمد۔سجاد گوجر۔ بٹ۔محمد اسماعیل۔حافظ منظور احمد۔ محمد عثمان اور دیگر  نے مل موڑ گیس پوائنٹ پر روک دیا اور ان سے گیس کی لوڈ شیڈنگ کا شیڈول طلب کیا انچارج سہیل احمد اور عملہ نے کہا کہ شیڈول نہیں ہے لیکن ہمیں میانچنوں  اسد آفتاب فون پر ہدایت دیتا ہے  لوڈ شیڈنگ کے حصہ کی گیس عارف والا کو مظاہرین نے کہا کہ ہمیں ہمارے حصہ کی گیس دی جائے اور عارف والا گیس کی فراہمی بند کی جائے شیڈول سے زائد لوڈ شیڈنگ نہیں ہونے انہوں نے اعلی حکام سے اصلاح احوال کا مطالبہ کیا ہے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -