ٹیچنگ ہسپتال،گارڈز کا فالج مریض پر وحشیانہ تشدد، کارروائی ٹھپ

ٹیچنگ ہسپتال،گارڈز کا فالج مریض پر وحشیانہ تشدد، کارروائی ٹھپ

  

 کوٹ چھٹہ(نمائندہ پاکستان)ٹیچنگ ہسپتال کے پرائیویٹ تین گاڈز کا فالج نے مریض کو کمرے میں بند کر کے  تھپڑوں مکوں سے تشدد کرکے کپڑے پھاڑ دئیے،   تفصیلات کے مطابق بلاک نمبر 39 کے رہائشی محمد منیر نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ (بقیہ نمبر10صفحہ6پر)

میں فالج کا مریض ہوں گزشتہ شب اچانک طبعیت خراب ہوئی 1122 نے ٹیچنگ ہسپتال پہنچا دیا جہاں پر ڈیوٹی پر موجود ڈاکٹر کا رویہ انتہائی برا تھا اور میری  طرف توجہ نہ دی گئی جس پر محمد منیر نے ڈاکٹر سے رجوع کیا تو وہ آگ بگولہ ہو گیا اور پرائیویٹ گاڈز جس میں ایک کا نام وسیم ہے نے مجھے کمرے میں بند کر کے تھپڑوں اور مکوں سے تشدد کیا اور کپٹرے پھاڑ دئیے جبکہ دو گاڈز نے میرے بیٹے کوپکڑے رکھا اور میری بیوی کو دھکے دئیے اور بدتمیزی کا مظاہرہ کیا گیا بعد میں  بغیر علاج کے ہسپتال سے باہر نکال دیا وقوعہ کی اطلاع مقامی تھانے سول لائن میں  درج ہونے کے باوجود کوئی کاروائی نہیں کی گئی محمد منیر نے ڈی پی او، آر پی او وزیر اعلیٰ پنجاب سے ڈاکٹر اور پرائیویٹ گاڈز کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیاہے۔ 

مزید :

ملتان صفحہ آخر -