بارشیں، سیلاب، سندھ، بلوچستان سے رابطہ ختم، سبزیاں مہنگی

بارشیں، سیلاب، سندھ، بلوچستان سے رابطہ ختم، سبزیاں مہنگی

  

 کوٹ ادو(تحصیل رپورٹر)23 جولائی سے ملک بھرمیں شروع ہونے والی مون سون کی بارشوں کے باعث جہاں پنجاب سمیت سندھ اور بلوچستان کے کئی اضلاع کوشدید نقصان پہنچاوہاں شدید بارش کے بعد فصلیں زیر آب آگئی ہیں جس سے کھیتوں میں کھڑی سبزیاں خراب ہو گئی ہیں جبکہ سیلابی صورت حال کے بعد شاہراہیں بہہ جانے سے سندھ اور بلوچستان کا زمینی راستہ (بقیہ نمبر19 صفحہ6پر)

منقطع ہونے سے جنوبی پنجاب میں سبزیوں کی رسد میں 60 سے زائد فیصد کمی ہوگئی ہیجس کے باعث قیمتوں میں بے پناہ اضافہ ہوگیا ہے،جنوبی پنجاب میں سبزیاں سندھ کے دیگر اضلاع کے علاوہ تمام صوبوں سے لائی جاتی ہیں جی سے ٹماٹر اور پیازکوئٹہ اوربلوچستان کے دیگر شہروں سے لائے جاتے ہیں جبکہ بدین،ٹھٹھہ،حیدرآباداورسندھ کے دیگر اضلاع سے لوکی، توری، کریلا، ہری مرچ، کھیرا، دھنیا اور پودینہ جبکہ آلو اپر پنجاب کیعلاقہ ساہیوال اوردیگر اضلاع سے لایا جاتا ہے جنکی رسد نہ ہونے کے برابرہے،اس حوالے سبزی منڈی کوٹ ادو کے آڑھتی چوہدری عبدالوحیدنیخدشہ ظاہر کیا ہے کہ جہاں سبزیاں کاشت کی گئی تھیں وہاں پانی بھرنے کے بعد اب جب تک پانی خشک نہیں تب ہوتا تک دوبارہ کاشت ممکن نہیں،سبزیوں کی رسد آنے والے کچھ ہفتوں تک پوری نہیں ہوسکے گی جس سے قیمتیں بڑھنے اور سبزیوں کی مانگ میں بے پناہ اضافے کے باعث ایک نیا بحران جنم لے سکتا ہے،

مزید :

ملتان صفحہ آخر -