شرجیل انعام میمن کی یوٹونگ بسز چائنہ کے کنٹری منیجر سے ملاقات

 شرجیل انعام میمن کی یوٹونگ بسز چائنہ کے کنٹری منیجر سے ملاقات

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر) صوبائی وزیر ٹرانسپورٹ شرجیل انعام میمن کی سندھ میں پبلک ٹرانسپورٹ مینیوفیکچرنگ پلانٹ لگانے سلسلے میں یوٹونگ بسز چائنہ کے کنٹری منیجر Paul Zhang  سے دوسری ملاقات۔   یوٹونگ کمپنی کے مقامی پارٹنرز  ماسٹرز موٹرز پاکستان کے  سی ای او رضا انصاری، وائس چیئرمین ندیم ملک، ڈائریکٹر ایم کے ٹی فیصل معراج اور نیشنل ریڈیو ٹرانسمیشن کمپنی پروجیکٹ ڈائریکٹر صہیب شفیق بھی ملاقات میں شریک تھے۔ ملاقات میں سندھ میں پبلک ٹرانسپورٹ مینیوفیکچرنگ پلانٹ لگانے کی پیش رفت کا جائزہ لیا گیا۔ اس موقع پر بتایا گیا کہ پلانٹ 15 سے 18 ایکڑ اراضی پر لگایا جائے گا، جس میں سالانہ 500 بسیں تیار کرنے کی صلاحیت ہوگی، جبکہ پلانٹ 16 سے 20 ماہ میں لگایا جاسکے گا۔ صوبائی وزیر ٹرانسپورٹ شرجیل انعام میمن نے کہا کہ سندھ حکومت مینیوفیکچرنگ پلانٹ میں سندھ بینک، سندھ ماس ٹرانزٹ اتھارٹی کے ذریعہ شراکت داری کر سکتی ہے یا یوٹونگ  نجی شعبے سے مقامی پارٹنر کا بھی انتخاب کر سکتی  ہے۔ انہوں نے کہا کہ پبلک ٹرانسپورٹ مینیوفیکچرنگ پلانٹ لگانا ہماری ترجیح ہے۔سندھ حکومت ہر حد تک جا سکتی ہے، ہر سہولت دینے کو تیار ہے۔ حکومت کی طرف سے اس معاملے پر کسی قسم کی تاخیر نہیں۔  ہم اس منصوبے کو جلد از جلد شروع کرنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت کی گارنٹی ہے، آنے والی حکومتیں اس منصوبے کو آگے بڑھانے کی پابند ہونگی۔  صوبائی وزیر ٹرانسپورٹ شرجیل انعام میمن نے منصوبے کو حتمی شکل دینے کے لئے تین ہفتوں کا وقت دے دیا تاکہ اس پر جلد از جلد پیش رفت کی جاسکے۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ سندھ حکومت صوبے کے ہر بڑے شہر کے ٹرانسپورٹ کے نظام کو جدید کرنے کے لیے کوشاں ہے۔پبلک ٹرانسپورٹ پلانٹ لگنے سے کم قیمت  معیاری بسیں مقامی سطح پر میسر ہو جائیں گی۔ شرجیل انعام میمن نے کہا کہ  عالمی بینک سے بھی بسوں سے متعلق بات چیت ہوئی ہے، جلد شہریوں کو خوشخبری دیں گے۔ ہماری کوشش ہے کہ کراچی میں ہزاروں بسیں لائیں۔ پیپلز بس سروس کے روٹس کی مرمت اور بہتری کے لیے وزیر اعلیٰ سندھ نے دو روز قبل 1.5 ارب روپے جاری کئے تھے۔۔آج سے سڑکوں کی مرمت اور بہتری کے کام کا آغاز ہوگیا ہے۔ 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -