حلیم عادل شیخ کی سیکیورٹی کا  معاملہ، وفاق اور صوبائی  سیکریٹری داخلہ کونوٹس

حلیم عادل شیخ کی سیکیورٹی کا  معاملہ، وفاق اور صوبائی  سیکریٹری داخلہ ...

  

کراچی(سٹاف رپورٹر)سندھ ہائی کورٹ نے حلیم عادل شیخ کو سیکیورٹی فراہم کرنے کے معاملے پروفاقی اور صوبائی سیکریٹری داخلہ کو نوٹس جاری کردیاہے۔عدالت نے وفاقی سیکریٹری داخلہ، صوبائی سیکریٹری داخلہ کو نوٹس جاری کرتے ہوئے فریقین سے 25 اگست تک جواب طلب کرلیا۔تفصیلات کے مطابق سندھ ہائی کورٹ میں اپوزیشن لیڈرسندھ اسمبلی حلیم عادل شیخ سے سیکیورٹی واپس لینے کے معاملے پرحلیم عادل شیخ کو 24 گھنٹے میں سیکیورٹی فراہم کرنے سے متعلق درخواست کی سماعت ہوئی۔عدالت نے وفاقی سیکریٹری داخلہ، صوبائی سیکریٹری داخلہ کو نوٹس جاری کرتے ہوئے فریقین سے 25 اگست تک جواب طلب کرلیا۔ملک الطاف جاوید ایڈووکیٹ نے درخواست میں موقف اختیار کیا کہ اپوزیشن لیڈر سندھ اسمبلی حلیم عادل شیخ کی جان کو شدید خطرات لاحق ہیں، حلیم عادل شیخ پر کئی بار حملے بھی ہوچکے ہیں۔وکیل حلیم عادل شیخ نے عدالت کے سامنے موقف پیش کیا کہ سندھ حکومت نے انتقامی کارروائی کا نشانہ بنانے ہوئے حلیم عادل شیخ کی سیکیورٹی واپس لے لی ہے۔حلیم عادل شیخ کی درخواست میں موقف اپنایا گیا کہ عدالت کے حکم پر کئی دیگر سیاسی رہنماں کو سیکیورٹی فراہم کی گئی ہے۔رہنما تحریک انصف نے عدالت سے استدعا کی کہ 24 گھنٹے میں سیکیورٹی رکھنے کا حکم دیا جائے۔ سیاہ شیشوں والی گاڑی رکھنے کی بھی ہدایت دی جائے۔حلیم عادل شیخ نے درخواست میں یہ بھی استدعا کی کہ ذاتی مسلح سیکیورٹی اہلکار رکھنے کی بھی اجازت دی جائے، وفاقی اور سیکریٹری داخلہ کو کسی بھی کارروائی سے روکا جائے۔اپوزیشن لیڈر سندھ اسمبلی کی درخواست میں وفاقی اور صوبائی سیکرٹریز داخلہ کو فریق بنایا گیا ہے۔

مزید :

صفحہ اول -