عالمی بینک خیبر پختونخوا میں 245میگاواٹ کے 2توانائی منصوبے شروع کریگا

  عالمی بینک خیبر پختونخوا میں 245میگاواٹ کے 2توانائی منصوبے شروع کریگا

  

        پشاور (سٹاف رپورٹر) عالمی بینک رواں سال ضلع سوات میں 245میگاواٹ کے 2پن بجلی منصوبے شروع کرے گاجن کی تکمیل سے صوبے کو سالانہ 13ارب روپے سے زائد کی آمدن ہوگی۔توانائی کے ان منصوبوں سے ایک طرف صوبے میں بڑی سرمایہ کاری آئے گی تودوسری طرف روزگارکے نئے مواقع میسرآئیں گے۔ اس سلسلے میں عالمی بینک کے سینئرانرجی سپیشلسٹ محمدثاقب کی قیادت میں عالمی بینک کے مشن نے سیکرٹری توانائی وبرقیات سید امتیازحسین شاہ سے ایک اعلیٰ سطحی اجلاس منعقدکیا۔اجلاس میں چیف ایگزیکٹوپیڈوانجینئرنعیم خان،KHREپروگرام کے چیف انجینئرشاہ حسین،پراجیکٹ ڈائریکٹرگبرال کالام پاورپراجیکٹ آصف کمال، پراجیکٹ ڈائریکٹرمدین پاورپراجیکٹ مصطفی کمال اورپراجیکٹ ڈائریکٹرفیزیبلٹی سٹیڈیزاینڈ مینجمنٹ انجینئرمحمدفرازنے شرکت کی۔ اجلاس میں بتایا گیاکہ عالمی بینک خیبرپختونخوامیں توانائی کے شعبے کی ترقی کے لئے مالی تعاون فراہم کرنے کے سلسلے میں آئندہ سال ضلع سوات میں پن بجلی کے 2منصوبوں پر تعمیراتی کام کا آغازکرے گاجن میں 157میگاواٹ مدین ہائیڈروپاورپراجیکٹ اور88میگاواٹ گبرال کالام ہائیڈروپاورپراجیکٹ شامل ہیں۔ اس سلسلے میں عالمی بینک اورصوبائی حکومت کے درمیان 450ملین ڈالرزمعاہدے پر دستخط کئے جاچکے ہیں۔یہ منصوبے 2027تک مکمل کرلئے جائیں گے جن سے صوبے کو سالانہ 13ارب روپے سے زائد کی آمدن ہوگی۔اجلاس میں بتایاگیاکہ منصوبوں کے لئے انٹرنیشنل کنسلٹنٹ کی تقرری کاعمل مکمل ہوچکاہے جس نے منصوبے کے ورک پلان اورآئندہ کی حکمت عملی پر کام شروع کردیا ہے اورپلاننگ کے تحت منصوبوں پر رواں سال سے عملی کام کا آغاز کیاجائے گا۔ اجلاس میں سیکرٹری توانائی سیدامتیازحسین شاہ نے عالمی بینک کی طرف سے توانائی کے شعبوں میں مالی معاونت کی فراہمی اورصوبے میں توانائی کے شعبے کی ترقی کے لئے اٹھائے گئے اقدامات کو سراہا اورامید ظاہر کی کہ مذکورہ منصوبوں سے صوبے میں بیرونی سرمایہ کاری آئے گی جس سے صوبے کی معیشت کو استحکام ملے گا۔اجلاس میں چیف ایگزیکٹو پیڈوانجینئرنعیم خان نے عالمی بینک کے نمائندہ وفد کو یقین دلایا کہ وہ صوبے میں توانائی منصوبوں کے حوالے سے درپیش مسائل خصوصاً اراضی کے حصول سمیت دیگر کو حل کرنے میں اپنابھرپورکرداراداکرینگے۔ 

مزید :

صفحہ اول -