اسرائیل کیساتھ تعلقات میں رکاوٹ بننے والے فرانسیسی ڈرائیور کو جیل بھیج دیاگیا

اسرائیل کیساتھ تعلقات میں رکاوٹ بننے والے فرانسیسی ڈرائیور کو جیل بھیج ...

پیرس(مانیٹرنگ ڈیسک) فرانس نے تل ابیب میں شراب کے نشے میں گاڑی چلاتے ہوئے ایک اسرائیلی خاتون کو مار کر کے بھاگنے والے فرانسیسی شخص ایرک روبک کو پانچ سال کے لیے جیل بھیج دیا ہے۔یہ وہی ڈرائیور تھا جسے فرانس کی جانب سے اسرائیل کے حوالے کرنے کے انکار کے بعد دونوں ممالک میں سفارتی تلخیاں پیدا ہو گئی تھیں۔

تفصیلات کے مطابق 2011ءمیں ایک 25 سالہ اسرائیلی خاتون لی زیتونی سٹرک پار کررہی تھیں کہ ایک گاڑی نے ٹکر مار دی تھی جس کے بعد گاڑی کے ڈرائیور ایرک روبک اور ان کے ساتھی کلاڈ خیاط فرانس بھاگ گئے تھے جس پر اسرائیل میں شدید غم و غصے کا اظہار کیا گیا تھا۔

اسرائیل نے فرانس پر ایرک روبک کو اپنے حوالے کرنے کے لیے بہت دباو¿ ڈالا جس کے بعد فرانس کے اس وقت کے صدر نکولس سرکوزی نے پیرس میں جاری اس مقدمے کی سماعت کے دوران مقتولہ کے خاندان کو انصاف فراہم کرنے کا وعدہ کیا تھا تاہم فرانس اپنے باشندوں کو یورپ سے باہر کسی ملک کے حوالے نہیں کرتا۔

فرانسیسی شہری ایرک روبک نے عدالت کو بتایا کہ وہ اس رات نائٹ کلب سے واپس آ رہے تھے اورگاڑی چلاتے ہوئے وسکی اور ووڈکا پی رہے تھے اور ان کی گاڑی کی رفتار مقررہ حد سے زیادہ تھی۔

عدالت نے دونوں افراد کو مصیبت میں مبتلا کسی شخص کی مدد کرنے میں ناکامی کا مرتکب قرار دے دیا جبکہ لی زیتونی کے والدین نے فیصلے پر اطمینان کا اظہار کیا۔

مزید : بین الاقوامی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...