انسداد پولیو قومی مہم 8دسمبر کو شروع ہو گی

انسداد پولیو قومی مہم 8دسمبر کو شروع ہو گی

                        لاہور( جنرل رپورٹر) مشیر وزیر اعلی پنجاب برائے صحت خواجہ سلمان رفیق نے لاہور کے سیوریج کے پانی کے نمونوں میں چار مقامات پر پولیو وائرس کی نشاندہی کے حوالے سے کہا ہے کہ محکمہ صحت پنجاب وزیر اعلی محمد شہباز شریف کی ہدایت کے مطابق پولیو کے خاتمہ کے لئے مسلسل جدوجہد کر رہا ہے ، ٹھوس حکمت عملی اور اقدامات کی وجہ سے لاہور کا اینوائرمنٹل سیمپل پازیٹو ہونے کے باوجود پولیو کا کوئی کیس رپورٹ نہیں ہوا - انہوں نے کہا کہ سیوریج کے پانی میں جو پولیو وائرس پایا گیا ہے وہ جنیٹک کے اعتبار سے پشاور میں پائے جانے والے وائرس سے مشابہ ہے لاہور میں پولیو وائرس کی لوکل ٹرانسمیشن نہیں خواجہ سلمان رفیق نے مزید کہا کہ اب تک پورے ملک میں پولیو کے 276 کیس رپورٹ ہو چکے ہیں جن میں سے صرف 3 پنجاب میں رپورٹ ہوئے جن میں سے چکوال اور بھکر میں ہونے والے دو پولیو کیسوں کے وائرس کا جنیٹک لنک ڈی آئی خان اور وزیرستان سے تھا - خواجہ سلمان رفیق نے کہا کہ پنجاب کی آبادی تینوں صوبوں کی مجموعی آبادی سے زیادہ ہے اور پانچ سال تک کی عمر کے 2 کروڑ 75 لاکھ بچے ہیں خواجہ سلمان رفیق نے کہا کہ طبی ماہرین کے مطابق پولیو وائرس کی وبا سے متاثرہ علاقوں میں بالغ عمر کے لوگ بھی پولیو وائرس کا کیرئیر ہوسکتے ہیں - مشیر صحت نے کہا کہ لاہور میں گزشتہ 3 ماہ سے 74 ہائی رسک یونین کونسلوں میں انسداد پولیو مہم چلائی جا رہی ہے اور 8 دسمبر سے ایک مرتبہ پھر انسداد پولیو کی قومی مہم کا آغاز کیا جا رہا ہے انہوں نے کہا کہ پولیو وائرس کا لوٹرانسمیشن سیزن شروع ہو چکا ہے اور حکومت کی کوشش ہے کہ اس موقع سے فائدہ اٹھاتے ہوئے پولیو وائرس کا قلع قمع کر دیا جائے - دریں اثناءمشیر صحت خواجہ سلمان رفیق نے دیگر صوبوں سے پنجاب آنے والے مسافر بچوں کو پولیو قطرے پلانے کے پروگرام کے تحت کوٹ سبزل رحیم یار خان میں سندھ سے آنے والے ٹریفک روٹ پر پولیو چیک پوسٹ کا جمعہ کے دن افتتاح کیا اور موقع پھربچوں کوقطرے بھی پلائے یہ چیک پوسٹ روٹری کلب کی جانب سے فراہم کردہ کنٹینرز میں قائم کی جا رہی ہیں -

مزید : میٹروپولیٹن 1