جعلی شناختی کارڈ، پولیس کارڈ، لائسنس، نکاح نامہ اور پریس کارڈ بنانے والے گروہ کے 2ملزم گرفتار

جعلی شناختی کارڈ، پولیس کارڈ، لائسنس، نکاح نامہ اور پریس کارڈ بنانے والے ...

لاہور( کرائم سیل) ساٹھ ہزار میں قومی شناختی کارڈ ،بیس ہزار میں پولیس کارڈ ،دس ہزار میں سرکاری دستاویزات،چھ ہزار میں لائسنس،پانچ ہزار میں چینل کا کارڈ ، چار ہزار میں نکاح نامہ، دوہزار میں اخبار کا کارڈ حاصل کیا جا سکتا ہے فراڈیوں کے گروہ کے دو افراد شاہدرہ سے گرفتارپولیس نے دیگر ارکان کی تلاش شروع کردی۔تفصیلات کے مطابق تھانہ شاہدرہ کے علاقہ شاہدرہ موڑ سے پولیس نے مخبر کی اطلاع پر چھاپہ مار کر فراڈ میں ملوث دو افراد کو گرفتار کر لیا پولیس کے مطابق گرفتار ہونے والے ملزمان راشد اور اشفاق کے قبضہ سے بڑی تعداد میں جعلی تیار کئے گئے قومی شناختی کارڈ،نکاح نامے ،پولیس کارڈ،قومی اخبارات کے کارڈ،پیدائشی سرٹیفکیٹ،نکاح رجسٹریشن سرٹیفکیٹ برآمد کر لئے پولیس کے مطابق ملزمان نے متعدد ایسے افراد جن کا تعلق پاکستان سے نہیں تھا اور افغانی باشندے تھے ان کو پاکستان کے جعلی پیدائشی سرٹیفکیٹ بنوا کر دیئے اور کئی افراد کو 60ہزار وصول کر کے پاکستان کا قومی شناختی کارڈ بنوا کردیا ،جبکہ ایسے کئی افراد دہشت گردی کی کاروائیوں میں ملوث ہونے کا شبہ بھی ظاہر کیا جا رہا ہے ملزمان اشفاق اور راشد اپنے آپ کو مقامی اخبار کا صحافی ظاہر کرتے ہوئے عرصہ دراز سے شاہدرہ میں رہائش اختیار کئے ہوئے تھے تاہم مخبر نے پولیس کو اطلاع دی کہ یہ دونوں ملزمان جعل سازی کر کے لوگوں کو لوٹ رہے ہیں اور یہاں بیٹھ کر افغانی باشندوں کو پاکستان کے جعلی شناختی کارڈ بنو کر دے رہے ہیں ڈی ایس پی شاہدرہ اور ایس ایچ او تھانہ شاہدرہ نے اللہ دتہ اے ایس آئی کی نگرانی میں ٹیم تشکیل دی جنہوں نے فوری کاروائی کرتے ہوئے فراڈ گینگ کے دو افراد راشد اور اشفاق کو فوری گرفتار کر لیا اور ان کے دفتر سے جعلی سرکاری دستاویزات برآمد کر لیں جبکہ دوران تفتیش پہلے ہی روز ملزمان نے 30سے زائد افغانی و دوسرے ممالک کے باشندوں کے پاکستانی شناختی کارڈ جعلی دستاویزات پر بنوا کر دینے کا نکشاف کیا اور بتایا ہر شناختی کارڈ کے بدلے انہوں نے 60ہزار روپے وصول کئے ہیں جبکہ کئی ایسے افراد جو کہ سرکاری ملازمتیں حاصل کرنا چاہتے تھے ان کو جعلی ڈاکومینٹ تیار کر کے دیئے ہیں جو کہ اب سرکاری ملازمتیں کر رہے ہیں پولیس کے مطابق انہوں نے ہر کام کے ریٹ مقرر کر رکھے ہیں جن میں ساٹھ ہزار میں قومی شناختی کارڈ ،بیس ہزار میں پولیس کارڈ ،دس ہزار میں سرکاری دستاویزات،چھ ہزار میں لائسنس،پانچ ہزار میں چینل کا کارڈ ، چار ہزار میں نکاح نامہ، دوہزار میں اخبار کا کارڈ حاصل کیے جا سکتے ہیں انوسٹی گیشن آفیسر کے مطابق ملزمان کے خلاف مکمل طور پر تحقیقات کی جارہی ہیں اور جلد ہی باقی ملزمان کو گرفتار کر لیاجائے گا ۔

مزید : علاقائی