پنجاب ایمرجنسی سروس 2015کو محفوظ سال کے طور پر منائے گی، ڈاکٹر رضوان نصیر

پنجاب ایمرجنسی سروس 2015کو محفوظ سال کے طور پر منائے گی، ڈاکٹر رضوان نصیر

 لاہور(کرائم سیل) ڈی جی ریسکیو پنجاب ڈاکٹررضوان نصیرنے کہا کہ پنجاب ایمرجنسی سروس (ریسکیو 1122)رضاکاروں کے ساتھ مل کرسال 2015کو محفوظ سال کے طورپرمنائے گی جس میں پنجاب کی تمام تحصیلوں میں کمیونٹی کی سطح پرخطرات کو کم کرنے جیسے اقدامات کاآغاز کیے جائیں گے جس کے نتیجے میں تحصیل اوریونین کونسل کی سطح پرخصوصی پروگرام ترتیب دیے جائیں گے تاکہ صحت مند؛ صاف اورمحفوظ معاشروں کاقیام عمل میں لایاجاسکے۔واضح رہے کہ پنجاب کی تمام تحصیلوں میں قائم کردہ کمیونٹی ایمرجنسی ریسپانس ٹیم (CERTs) کو معاشروں کو حادثات سے پاک کرنے کیلئے تربیت دی جائے گی تاکہ ان ٹیموں اور رضاکاروں کو کو پیشہ ورانہ صلاحیتوں سے آراستہ کیاجائے تاکہ وہ کسی بھی ایمرجنسی کی صورت میں ریسکیو 1122کے شانہ بشانہ کام کرسکیں۔قبل ازیں ڈی جی ریسکیو پنجاب کی خصوصی ہدایات پردنیابھرکے رضاکاروں کے ساتھ اظہارِ یکجہتی کرنے کیلئے پنجاب ایمرجنسی سروس (ریسکیو1122)نے پنجاب کے تمام اضلاع میں ’’رضاکاروں کے عالمی دن ‘‘ منا یا۔اس دن کی خصوصی اہمیت پرروشنی ڈالنے کیلئے اضلاع میں ریسکیو رضا کاروں نے ریسکیو 1122کے اہلکاروں کے ساتھ محفوظ معاشرے کے قیام کے لیے ریسکیو 1122کے شانہ بشانہ مل کر کام کرنے کے عزم کو دہرایا ۔ریسکیو 1122ہیڈکوارٹرز میں منعقدہ ایک میٹنگ کی صدارت کرتے ہوئے ڈی جی ریسکیو پنجاب ڈاکٹر رضوان نصیر نے ریسکیو رضاکاروں کی کوششوں کو سراہا ، انہوں نے کہا کہ اس وقت ریسکیو 1122پاکستان کی سب سے بڑی ایمرجنسی ہیومینیٹیرئن سروس بن چکی ہے ، ہزاروں رضاکاروں کیلئے ریسکیو1122کے ضلعی آفس حاضرہیں جہاں سے وہ ریسکیو 1122کے ہمراہ ایک محفوظ کلچرکوپروموٹ کرنے میں اہم کرداراداکرسکتے ہیں۔ انہوں نے کہا ریسکیو 1122تحصیلوں میں حادثات کی شرح کو کم کرنے کیلئے تحقیق کرتی ہے ، جسے ضلعی ایمرجنسی بورڈز کی مٹینگ میں زیرِبحث لایاجاتاہے اور اس کی بنیاد پرمحفوظ معاشروں کے قیام کی خاطرمختلف حفاظتی اقدامات اٹھائے جاتے ہیں۔انہوں نے مزید کہاکہ صوبائی سطح پرریسکیو 1122متعلقہ محکمہ جات اور پالیسی بنانے والوں سے روزہ مرہ زندگی میں حادثات کی بڑھتی ہوئی شرح کو کم کرنے کیلئے کام کررہی ہے۔

مزید : علاقائی