بیرون ملک قید پاکستانیوں کی مدد کیلئے وزارتوں کے سینئر افسران طلب

بیرون ملک قید پاکستانیوں کی مدد کیلئے وزارتوں کے سینئر افسران طلب

لاہور(نامہ نگارخصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے عرب ممالک میں مختلف جرائم میں قید پاکستانیوں کو حکومت کی طرف سے قانونی معاونت فراہم کرنے کے لئے دائر درخواست پر وزارت خارجہ اور وزارت داخلہ کے سینئر افسروں کو جواب سمیت 9دسمبر کو طلب کرلیا ۔مسٹر جسٹس سید منصور علی شاہ نے عاصمہ شفیع سمیت 9 پاکستانی خاندانوں کی طرف سے دائر درخواست پر سماعت شروع کی تو درخواست گزاروں کی وکیل نے موقف اختیار کیا کہ سعودی عرب، عمان، قطر اور بحرین میں ورک ویزا پر جانے والے سینکڑوں پاکستانی منشیات کی سمگلنگ سمیت دیگر الزامات میں جیلوں میں قید ہیں اور ان کے خلاف مقدمات بھی چل رہے ہیں ،انہوں نے بتایا کہ عرب ممالک میں زیر ٹرائل تمام پاکستانیوں کو عربی زبان سے واقفیت نہیں ہوتی اور وہ متعلقہ ممالک کی عدالتوں میں حقائق کے مطابق دفاع نہیں کرتے ، ان پاکستانیوں کو متعلقہ ممالک کی طرف سے جو وکلاء فراہم کئے جاتے ہیں وہ بھی عربی زبان دلائل دیتے ہیں اور ملزم پاکستانیوں کو کچھ پتہ نہیں ہوتا کہ دلائل ان کے حق میں دیئے جا رہے ہیں یا ان کے خلاف دیئے جا رہے ہیں، عدالت نے وزارت خارجہ ،وزارت داخلہ اور اوورسیز پاکستانیز فاؤنڈیشن کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 9دسمبر کو طلب کرلیا ، عدالت نے متعلقہ وزارتوں کے سینئر افسروں کو بھی آئندہ سماعت پر پیش ہونے کا حکم دیا ہے۔

مزید : صفحہ آخر