ہائیکورٹ کا نظر بند کئے گئے 68قصابوں کو فوری رہاکرنے کا حکم

ہائیکورٹ کا نظر بند کئے گئے 68قصابوں کو فوری رہاکرنے کا حکم

لاہور(نامہ نگارخصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے مال روڈ پر احتجاج کرنے پر گرفتار اور نظر بند کئے گئے 68قصابوں کو فوری رہاکرنے کا حکم دیتے ہوئے ڈی سی او لاہور کووضاحت کے لئے طلب کرلیا ہے۔مسٹر جسٹس انوار الحق نے افتخار احمد سمیت دیگر قصابوں کی نظربندی کے خلاف درخواستوں پر سماعت کی، درخواست گزاروں کے وکلاء نصرت ہاشمی اور ملک کفیل نے موقف اختیار کیا کہ پرامن احتجاج کرنے والے قصابوں کو ضلعی انتظامیہ کی ہدایت پر پولیس نے گرفتاراور نظربند کر لیا ہے ، انہوں نے استدعا کی کہ گرفتار اور نظر بند قصابوں کو رہا کرنے کا حکم دیا جائے، سرکاری وکیل نے عدالت کو بتایا کہ یہ قصاب مردہ گوشت فروخت کرنے میں ملوث ہیں، ضلعی انتظامیہ نے ان کی دکانوں پر چھاپے مارے تو یہ لوگ احتجاج پر اترے آئے جس پر ان کے خلاف مقدمات درج کئے گئے، عدالت نے استفسار کیا کہ کیا کسی شہری نے ان کے خلاف شکایت کی، سرکاری وکیل کے نفی کے جواب میں عدالت نے کہا کہ احتجاج تو ان کو کرنا چاہیے تھا جنہیں مردہ گوشت فروخت کیا گیا تھا، عدالت نے دلائل سننے کے بعد گرفتار اور نظر بند کئے گئے اڑسٹھ قصابوں کو پچاس پچاس ہزار مچلکوں کے عوض فوری رہاکرنے کا حکم دیتے ہوئے ڈی سی او لاہور کو15دسمبر کوپیش ہونے کی ہدایت کی ہے۔

مزید : صفحہ آخر