پیسہ خرچ کرنے کیلئے چندرہنماءاصول جو آپ کو پریشانی سے بچائیں

پیسہ خرچ کرنے کیلئے چندرہنماءاصول جو آپ کو پریشانی سے بچائیں
پیسہ خرچ کرنے کیلئے چندرہنماءاصول جو آپ کو پریشانی سے بچائیں

  

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) بعض اوقات انسان کے پاس اکٹھے پیسے آجانے کی صورت میں  کہیں ایسی جگہ خرچ ہوجاتے ہیں جس کا آپ کو بعد میں ملال رہتاہے تو یہاں آپ کو کچھ اُصول بتاتے ہیں جن پر عمل کرکے آپ پچھتاوے سے بچ سکتے ہیں مثلاً وہ گاڑی یا موبائل جو آپ کو پسند ہے وہ صرف کچھ دیر کے لیے ہی آپ کو خوشی فراہم کرتا ہے لیکن اس کے برعکس اپنے اہلخانہ کے ساتھ وقت بتانا آپ کے لیے زیادہ اور دیرپا خوشی کا باعث ہوسکتا ہے۔

سارے پیسے خود پر خرچ نہ کریں

یہ کام صرف امیروں کے لیے نہ چھوڑیں، دوسروں کی مدد کرنے سے بھی آپ کو خوشی ملے گی۔سائیکالوجسٹ پروفیسر الیبتھ ڈن کی جانب سے کیے جانے والے ایک تجربے میں یہ بات پائی گئی کہ دوسروں کو پیسے دینے سے لوگوں کو دیرپا خوشی ملتی ہے خاص طور پر تب جب لوگوں کو یہ علم تھا کہ جن ضرورت مند افراد کو یہ پیسے دیے جارہے ہیں انہیں اس کی واقعی ضرورت ہے ۔

کمپیوٹر کی غٖلطی نے نوجوان کی" لاٹری" لگا دی

شاہانہ استعمال کی چیزوں پر فیملی ، دوستوں کو ترجیح دیں

انسان ایساسوچتاہے کہ نیا صوفہ زندگی بہتر بناسکتاہے لیکن حقیقت میں لمبے عرصے تک ساتھ دینے والی اشیاء لوگوں کو خوش نہیں کرتیں۔ لوگوں کو ایسا لگتا ہے کہ یہ بہت عرصے تک ہمارے ساتھ ہوں گی اس لیے ہمیں خوشی ملے گی ۔ اس کے برعکس دوستوں یا گھر والوں کے ساتھ بتائی ہوئی چھٹیوں کی یادیں اس وقت سے زیادہ عرصے تک آپ کے ساتھ ہوں گی۔

خریدی چیز کا سحرٹوٹنے والاہے

محققین کے مطابق بڑی خریداریاں جیسے کے نیا آئی فون سکس آپ کو مختصر مدت کے لیے خوشی فراہم کرتا ہے تاہم یہ جلد ہی ختم ہوجاتی ہے اور اس کی جگہ مایوسی لے لیتی ہے کیوں کہ ہمارا دماغ اس طرح کی چیزوں سے بہت زیادہ امیدیں وابسطہ کرلیتا ہے۔

سعودی شہری کے خواب نےجہاز میں خوف و ہراس پھیلا دیا

 وقت کی قیمت پیسے سے زیادہ

جب لوگ اپنے کرئیر کی اونچائیوں پر پہنچنا شروع کرتے ہیں تو وہ بڑا گھر، بہتر گاڑی اور دیگر چیزوں کی خواہش کرنے لگتے ہیں۔ 2004 ءمیں یونیورسٹی آف زیورخ میں ہونے والے ایک مطالعے میں ایسے افراد مجموعی طور پر اپنی زندگی سے دوسروں کے مقابلے میں کم مطمئن دیکھے گئے۔

 پیسہ خود کو وقت دینے کے لیے استعمال کریں

ایسے کام جو آپ کو بور کرتے ہیںوہ کسی دوسرے فرد سے پیسے دیکر بھی کروائے جاسکتے ہیں۔ اس سے آپ کو وقت ملے گا اور آپ ان کاموں میں مشغول رہ سکتے ہیں جن میں آپ کو دلچسپی ہے۔

دوسروں کی نقل سے گریز

کسی مشہوری یا دوسرے شخص کے پاس کوئی چیز دیکھ کر خریدنے کافیصلہ نہ کریں بلکہ اپنی اندر کی دنیا میں سے چیزوں کا انتخاب کریں جو آپ کو اچھی لگے یادیرینہ خواہش و ضرورت ہو۔ پروفیسر تھامس گیلووچ کے مطابق دوسروں کی دیکھا دیکھی چیزیں خریدنے پر یہ صورت حال بدترین ہوتی ہے کیوں کہ آپ کو بعد میں یہ احساس ہوگا کہ شاید اس چیز کی مجھے ضرورت ہی نہیں تھی جس سے آپ مایوسی کا شکار ہوجائیں گے۔

مزید : تعلیم و صحت