سعودی فرمانروا نے خلیج تعاون کونسل کے سربراہی اجلاس میں شرکت کے لئے ایک ایسی شخصیت کو دعوت نامہ بھیج دیا کہ کسی کو بھی یقین نہیں آئے گا

سعودی فرمانروا نے خلیج تعاون کونسل کے سربراہی اجلاس میں شرکت کے لئے ایک ایسی ...

ریاض(ڈیلی پاکستان آن لائن)سعودی عرب کے فرمان روا شاہ سلمان نے خلیج تعاون کونسل (جی سی سی) کے سربراہی اجلاس میں شرکت کے لیے قطر کے امیر شیخ تمیم بن حمد الثانی کو بھی دعوت دے دی،قطری امیر  سعودی فرمانروا کی دعوت قبول کرتے ہوئےسربراہی اجلاس میں شریک ہوں گے یا نہیں؟اس حوالے سے قطر حکومت کا با ضابطہ موقف سامنے نہیں آیا ۔

عرب میڈیا کے مطابق سعودی فرمانروا شاہ سلمان بن عبد العزیز نے رواں ماہ  9 دسمبر کو ریاض میں ہونے والے خلیج تعاون کونسل کے سربراہی اجلاس میں شرکت کے لئے قطر کے امیر  شیخ تمیم بن حمد الثانی کو دعوت نامہ بھیج دیا ہے ،یاد رہے کہ گذشتہ ڈیڑھ سال سے سعودی عرب اور قطر کے درمیان معاملات کشیدگی کا شکار ہیں جبکہ سعودی عرب نےجون 2017 سے قطر کے ساتھ  سفارتی اور معاشی تعلقات منقطع کر رکھے ہیں۔یاد رہے کہ 

سعودی عرب کی جانب سے قطر کے امیر کو  دعوت ایک ایسے موقع پر دی گئی ہے جب ایک دن قبل ہی  اس نے تیل برآمد کرنے والے ممالک کی تنظیم (اوپیک) سے دستبردار ہونے کا فیصلہ کیا تھا۔ خلیج تعاون کونسل کے اجلاس میں شرکت کے لیے دعوت نامہ قطر کے وزیرمملکت برائے خارجہ امور سلطان بن سعد المریخی کی جانب سے دیے گئے ایک عشایے میں تنظیم کے بحرینی سیکریٹری جنرل عبداللطیف بن راشد الزیانی نے پہنچایا۔

قطر کی جانب سے تاحال ایسا کوئی بیان جاری نہیں کیا گیا ہے کہ آیا امیر قطر اجلاس میں شرکت کے لیے سعودی عرب جائیں گے یا نہیں۔

مزید : عرب دنیا