شوگر ملو ں کو قومیانہ پڑے گا ،پھر ان کو کوئی نہیں بچا سکے گا :ندیم افضل چن کا گنے کی کرشنگ شروع نہ ہونے پر وزیر اعظم سے نوٹس کا مطالبہ

شوگر ملو ں کو قومیانہ پڑے گا ،پھر ان کو کوئی نہیں بچا سکے گا :ندیم افضل چن کا ...
شوگر ملو ں کو قومیانہ پڑے گا ،پھر ان کو کوئی نہیں بچا سکے گا :ندیم افضل چن کا گنے کی کرشنگ شروع نہ ہونے پر وزیر اعظم سے نوٹس کا مطالبہ

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) تحریک انصاف کے رہنما ندیم افضل چن نے کہاہے کہ شوگر ملیں وقت پر نہ چلانا کسانوں کے ساتھ بہت بڑاظلم ہے ، ایک وقت آئے گا کہ یہ ملیں قومیانی پڑیں گی اور جب وہ وقت آئے گا تو پھر ان کو کوئی نہیں بچا سکے ، امید کرتا ہوں کہ وزیر اعظم اس معاملے پر نوٹس لیں گے ۔

اے آروائی نیوز کے پر وگرام ”پاور پلے“ میں گفتگو کرتے ہوئے ندیم افضل چن نے کہاہے کہ حکومت کی شوگر ملز ہونی چاہئے تھی کیونکہ اگر حکومت کی کچھ شوگر ملیں ہوتیں تو مقابلہ ہوتاہے ، شوگر ملز ایسوسی ایشن میں جو بیٹھے ہوئے ہیں ، سب ایک ہی ہیں ان میں کوئی کسی پارٹی میں بیٹھا ہوا ہے اور کوئی کسی پارٹی میں بیٹھا ہواہے ۔ انہوں نے کہا کہ گنے کی کرشنگ جتنی لیٹ ہوگی گنے میں مٹھاس بڑھے گی اور کسان کا نقصان ہوگا ۔

ان کا کہنا ہے کہ ایک وقت آئے گا کہ یہ شوگر ملیں قومیانی پڑیں گی اور جب وہ وقت آئے گا تو پھر ان کو کوئی نہیں بچا سکے گا ۔ انہوں نے کہا کہ یہ بہت بڑا ظلم ہواہے، شوگر ملیں وقت پر کیوں نہیں چلائی گئیں؟ انہوں نے کہا کہ ن لیگ کے دور میں کسانوں کے ساتھ خاص طور پر ظلم ہواہے ،میں امید کرتاہوں کہ وزیر اعظم عمران خان کسانوں کے مسائل حل کریں گے ،خان صاحب اس مسئلے پر خود نوٹس لیں، اس وقت کسانوں کی آواز سننے والا کوئی نہیں ہے ، یہ تمام شوگر ملیں حکومت کے بل بلوتے پر لگائی گئی ہیں ، وہ پرانے کاروباری لوگ جن کی ریاست مدد نہیں کرتی تھی وہ یہ ملیں نہیں لگا سکے تھے۔

مزید : قومی