کوہاٹ، مختلف علاقوں میں سرچ آپریشنز، 58مجرمان 87سہولت کار 2232مشتبہ گرفتار

کوہاٹ، مختلف علاقوں میں سرچ آپریشنز، 58مجرمان 87سہولت کار 2232مشتبہ گرفتار

  

پشاور( سٹاف رپورٹر)ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر کوہاٹ کیپٹن(ر)واحد محمود کی خصوصی ہدایت پر ایس پی آپریشنز صلاح الدین کنڈی اور سرکل ایس ڈی پی اوز کی زیر نگرانی کوہاٹ کے چاروں سرکلز سٹی،ہیڈ کوارٹر،صدر اور لاچی کے مختلف علاقوں میں سرچ آپریشنز ،اچانک چھاپوں اور کریک ڈاؤن کے دوران پولیس نے ماہ نومبر کے دوران شہر اور ملحقہ علاقوں میں دھماکہ خیز مواد اوراسلحہ و منشیات کی بھاری کھیپ برآمد کرنے کے علاوہ قتل و اقدام قتل اور دیگر سنگین نوعیت کے مقدمات میں مطلوب58مجرمان اشتہاریوں اور انکے 87سہولت کاروں سمیت 2232مشتبہ افراد کو گرفتار کرلیا۔ضلع بھرمیں کریک ڈاؤن کے نتیجے میں6دستی بم،24کلوگرام دھماکہ خیز مواد،21ڈیٹونیٹر،20کلاشنکوف،3کلاکوف،25ریپیٹر،8رائفل،42بندوق،170پستول،مختلف بور کے 10ہزار کارتوس، 35ہزار عدد چائنہ پٹاخے اور 325چارجرز برآمد کئے گئے۔آپریشنز کے دوران ضلع بھر میں 1400مکانات چیک کئے گئے جن میں مقیم 138غیر رجسٹرڈ کرایہ داروں کے خلاف مقدمات درج کئے گئے جبکہ حساس اور آسانی سے ہدف بننے والے مقامات کی چیکنگ کے دوران غیر مؤثر سیکیورٹی انتظامات پر 42نجی کاروباری مراکز کے خلاف مقدمات قائم کئے گئے۔منشیات فروشوں کے خلاف کریک ڈاؤن کرتے ہوئے ایک لاکھ گرام چرس،16000گرام افیون،27ہزار گرام ہیروئن اور 6بوتل شراب برآمد کرکے 19منشیات فروشوں کے خلاف مقدمات درج کئے گئے اور انہیں جیل بھیج دیا گیا۔ماہ رفتہ پولیس نے وی وی ایس ،آئی وی ایس اور سی آر وی ایس موبائل فون کی جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے چھوٹی بڑی 25560گاڑیوں بشمول موٹر سائیکلوں اور 45800افراد کا ڈیٹا چیک کیا جن میں 1926افراد کو زیر 107/151اور 1600افراد کو ضابطہ فوجداری کے دفعہ 55/109کے تحت حراست میں لیکر چالان عدالت کیا گیاجبکہ نان رجسٹرڈ اور بغیر نمبر پلیٹ 165موٹر سائیکلیں تحویل میں لیکر مزید چھان بین کیلئے متعلقہ تھانوں میں بند کردئیے گئے ۔اسی طرح ہوائی فائرنگ کے سد باب کے حوالے سے ڈی پی او کی طرف سے واضح احکامات پر سختی سے عملدرآمد کرتے ہوئے پولیس نے شہر اور مضافات کے مختلف علاقوں سے ہوائی فائرنگ کے مرتکب 125 افراد کو حراست میں لیکر انکے قبضے سے مختلف قسم کے 130عدد ہتھیار اور درجنوں کارتوس برآمد کرلئے اور انکے خلاف مختلف تھانوں میں مقدمات درج کرکے انہیں پابند سلاسل کردیا گیا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -