تعلیمی اداروں کی بلنگ میں جعلسازی کا انکشاف ‘ الہادی انٹرپرائزز کیخلاف چھان بین شروع

تعلیمی اداروں کی بلنگ میں جعلسازی کا انکشاف ‘ الہادی انٹرپرائزز کیخلاف چھان ...

خانیوال(بیورو نیوز) 4اضلاع کے تعلیمی اداروں کی بلنگ میں جعلی ’’سی پی آر ‘‘ اور ’’سیلز ٹیکس ریٹرن ‘‘بناکر دینے میں ملوث فرم ’’الہادی انٹرپرائزر ‘‘ کے خلاف مبینہ طور پر تحریری شکایات پر نیب متحرک ،ایف بی آر نے حقائق معلوم ہونے پر (بقیہ نمبر36صفحہ12پر )

مبینہ طور پر دو نمبر دھندے میں ملوث مذکورہ فرم کوسسپنڈ(SUSPENDED)کرکے فیصل آباد،ٹوبہ ٹیک سنگھ،ملتان اور ضلع خانیوال کے تمام سرکاری سکولوں کو لوٹے گئے انکم ٹیکس اور سیلز ٹیکس کی جعلی رسیدات جمع کروانے کے احکامات دے دئیے ۔تفصیل کے مطابق 2016سے ’’جنرل آرڈر سپلائر‘‘ کے طور پر فیصل آباد،ٹوبہ ٹیک سنگھ ،ملتان اور خانیوال کے اضلاع میں سرکاری سکولوں کی بلنگ کرنے والی فرم الہادی انٹرپرائزر (رجسٹریشن نمبر 7347612-3) کے بارے میں انکشاف ہوا ہے کہ مذکورم فرم کے کرتا دھرتا سہیل فاروق ولد محمد فاروق سکنہ رانا سٹریٹ خانیوال روڈ کبیروالا اور محمد ریحان واصف سکنہ کالونی نمبر3خانیوال نے فیصل آباد،ٹوبہ ٹیک سنگھ ،ملتان اور خانیوال کے اضلاع میں سکولوں کی بلنگ میں جعلی سی پی آر اور سیلز ٹیکس ریٹرن بناکر دی ہیں اور اس حوالے سے نیشنل بینک کی جعلی مہریں لگاکر وصول شدہ ٹیکسز کی بھاری رقوم خود ہڑپ کرچکے ہیں ،جس کی وجہ سے حکومت کو کروڑوں روپے کا نقصان پہنچ ہے ۔الہادی انٹرپرائزر کی کرپشن بارے حقائق سامنے آنے پر ایف بی آر نے کارروائی کرتے ہوئے الہادی انٹرپرائزر کو سسپنڈ (SUSPENDED)کرکے فیصل آباد،ٹوبہ ٹیک سنگھ،ملتان اور ضلع خانیوال کے تمام سرکاری سکولوں کو لوٹے گئے انکم ٹیکس اور سیلز ٹیکس کی جعلی رسیدات جمع کروانے کے احکامات دیتے ہوئے کہا کہ جو سکول ’’جعلی رسیدات ‘‘ جمع کرانے میں تاخیر کریں گے یا لیت ولعل سے کام لیں وہ لوٹے گئے ٹیکسز کی تمام رقوم جمع کرانے کے پابند ہوں گے اور ان کے خلاف حسب ضابطہ کارروائی عمل میں لائی جائے گی ۔علاوہ ازیں دستیاب ذرائع کے مطابق نیب نے بھی مبینہ طور پر موصولہ تحریری درخواستوں کی روشنی میں ’’الہادی انٹرپرائزر ‘‘ کے خلاف چھان بین اورکارروائی کا آغاز کردیا ہے ۔

جعلسازی

مزید : ملتان صفحہ آخر