علاقائی بینچز کی حمایت میں وکلاء کی 7 روزہ ہڑتال ‘ سائل دھکے کھاکر واپس

علاقائی بینچز کی حمایت میں وکلاء کی 7 روزہ ہڑتال ‘ سائل دھکے کھاکر واپس

  

ڈیرہ غازیخان(سٹی رپورٹر) پنجاب بار کونسل کی کال پر ڈیرہ غازیخان سمیت (بقیہ نمبر9صفحہ12پر )

پنجاب کے دیگر اضلاع میں وکلاء کی سات روزہ احتجاجی ھڑتال کا سلسلہ تیسرے روز بھی جاری رھا۔تفصیلات کے مطابق پنجاب بار کونسل نے بہاولپور، ساہیوال، سرگودھا، گوجرانوالہ اور ڈیرہ غازیخان میں وکلاء کے لاھور ھائی کورٹ کے بنچز کے قیام کی حمایت کرتے ہوئے صوبہ بھر میں سات روز تین دسمبر تا نو دسمبر تک مکمل احتجاجی ھڑتال کی کال دی۔ پنجاب کے دیگر اضلاع کی طرح ڈیرہ بار کے وکلاء تیسرے روز بھی عدالتوں میں پیش نہ ھوئے۔ اور عدالتوں کا مکمل بائیکاٹ کیا اس موقعہ پر صدر بار ندیم غوث اور سابق صدر بار بہرام بزدار نے کہا کہ عوام کی سہولت اور انہیں ان کی دھلیز پر انصاف کی فراھمی کے لیے پانچوں ڈویثزن میں لاھور ھائی کورٹ میں بنچز کا قیام نہ صرف وقت کی ضرورت ھے بلکہ اس سے عوام کو ان کی دھلیز پر جلد انصاف کی فراہمی میسر آ سکے گی وہ تقریبا گزشتہ تین سالوں سے پرامن احتجاج کر رھے ہیں اور اپنا جائز مطالبہ کے لیے حکومت کو ھر ھفتے یادھانی پیش کراتے آ رھے ہیں مگر آج تک اس پر کوئی پیش رفت نہیں کی گئی اگر ان کے مطالبات تسلیم نہ کیے گے تو وہ مزید سخت لائحہ عمل اختیار کرنے پر مجبور ھونگے انہوں نے کہا کہ گورنر پنجاب چوھدری غلام سرورھمارا ہائیکورٹ کامطالبہ پورا کرائیں۔ ھڑتال کی وجہ سے گزشتہ روز بھی کوئی وکیل عدالتوں میں پیش نہ ھوئے۔جس کی وجہ سے کیسز کی سماعت کے لیے آئے ھوئے دوردراز سے لوگوں کو شدید پریشانی کا سامنا دیکھنے کو ملا۔

واپس

مزید :

ملتان صفحہ آخر -