کھلی کچہری یا’’دربار‘‘ سرکاری شہزادوں کا رویہ تبدیل بزرگوں کو پیروں میں بٹھالیا ،کرسیاں خالی پڑی رہیں

کھلی کچہری یا’’دربار‘‘ سرکاری شہزادوں کا رویہ تبدیل بزرگوں کو پیروں میں ...

وہاڑی(بیورو رپورٹ+نا مہ نگار) پی ٹی آئی حکومت کے تبدیلی کے دعوے ہوا ہوگئے سرکاری افسروں کی افسرشاہی ختم نہ ہوسکی بوریوالا میں ڈپٹی کمشنر اور ڈی پی او کی مشترکہ کھلی کچہری کے دوران انسانیت سے گرے ہوئے مناظر دیکھنے میں آئے۔بزرگ مرد و خاتون کو کرسی پر بٹھانے کی بجائے پیروں میں بٹھاکر اس کا مسئلہ سنا گیا افسران کی افسر شاہی پر شہر کے سیاسی سماجی حلقوں میں تشویش کی لہر دوڑ گئی تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی حکومت کے تبدیلی (بقیہ نمبر21صفحہ12پر )

کے دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے سرکاری افسران نے حکومت کی ہدایات پر کھلی کچہری تو لگانی شروع کردی ہے لیکن افسران کی افسرشاہی اور عام لوگوں کے ساتھ رویوں میں تاحال بہتری نہ آسکیروز بوریوالا میں ڈپٹی کمشنر اور ڈی پی او کی کھلی کچہری میں معمر خاتون کو کرسی کی بجائے پیروں میں بٹھا کر اس کا مسئلہ سنا گیا سرکاری افسران کی اس حرکت پر شہریوں عدنان،عرفان،زوہیب،علی رضا،الیاس،عمیر،بلال،سلمان و دیگر نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے صحافیوں کو بتایا کہ پاکستان تحریک انصاف نے الیکشن سے قبل پورے ملک میں تبدیلی تبدیلی کا راگ الاپا مگر تاحال کوئی تبدیلی نظر نہیں آئی بلکہ ایسا کام تو ن لیگ کی حکومت کے دور میں بھی دیکھنے کو نہیں مل رہا شہریوں نے کہا کہ اگر تبدیلی عام لوگوں کو سرکاری افسران کے سامنے رسوا کرنے کا نام ہے تو ایسی تبدیلی کو ہم نہیں مانتے شہریوں نے احتجاج کرتے ہوئے وزیر اعظم پاکستان اور وزیر اعلی پنجاب سے فوری معاملہ کا نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

سرکاری شہزادے

مزید : ملتان صفحہ آخر