فیصل واوڈا کی دہری شہریت ، وکیل صفائی کو جواب کیلئے آخری مہلت

فیصل واوڈا کی دہری شہریت ، وکیل صفائی کو جواب کیلئے آخری مہلت

  

کراچی (این این آئی) سندھ ہائیکورٹ نے وفاقی وزیر فیصل واوڈا کی دہری شہریت ہونے کے باعث نااہلی کی درخواست پر وکیل صفائی کو جواب کے لیئے آخری مہلت دیتے ہوئے چیف الیکشن کمشنر کا نوٹس جاری کردیا۔ دو رکنی بینچ کے روبرو وفاقی وزیر فیصل واوڈا کی دہری شہریت ہونے کے باعث نااہلی کی درخواست کی سماعت ہوئی۔فیصل واوڈا کے وکیل نے جواب اور متعلقہ دستاویزات پیش کرنے کیکئے مہلت طلب کرلی۔ عدالت نے ریماکس دیئے مسلسل نوٹس کیا جارہا تھا آپ جواب تو جمع کرائیں۔ عدالت نے فیصل واوڈا کے وکیل کو جواب کیلئے 20 دسمبر تک مہلت دے دی۔ الیکشن کمیشن کا جواب نہ آنے پر عدالت برہم ہوگئی۔ عدالت نے چیف الیکشن کمشنر کا نوٹس جاری کرتے ہوئے آئندہ سماعت پر ہر صورت جواب جمع کرانے کا حکم دیدیا۔ قادر خان مندوخیل ایڈووکیٹ نے دائر درخواست میں موقف اپنایا تھا کہ فیصل واوڈا آرٹیکل 62 پر پورا نہیں اترتے۔ فیصل واوڈا نے اپنے حلف نامے میں برطانیہ, دبئی اور ملائشیا کی جائیداد قرض شدہ ظاہر کی۔ کاغذات نامزدگی میں کسی فارن اکاونٹ کا ذکر نہیں ہے۔ اس غیرملکی جائیدادکی منی ٹریل نہیں دی گئی۔ ریٹرننگ افسرکے ریکارڈمیں کسی غیرملکی جائیداد کا ذکر نہیں ہے۔اربوں کی جائیدادیں رکھنے والے فیصل واوڈا نے 2015 میں کوئی ٹیکس نہیں دیا۔ ریٹرننگ افسر نے فیصل کے خلاف یہ کہہ کر درخواست مستردکی کہ اس نیدوہری شہریت چھوڑدی۔ ریٹرننگ افسر کے ریکارڈ میں امریکی شہریت سرینڈر کرنے کا کوئی ریکارڈ نہیں۔

مزید :

صفحہ آخر -