این جی اوز حکومت کیساتھ ملکر کام کریں مکمل تعاون کیا جائیگا،گورنر پنجاب

این جی اوز حکومت کیساتھ ملکر کام کریں مکمل تعاون کیا جائیگا،گورنر پنجاب

  

لاہور( نمائندہ خصوصی )گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے کہا ہے خدمت خلق میں ہی معراجِ انسانیت ہے، جو لوگ دکھی انسانیت کی خد مت اور عوامی فلاح کیلئے کام کرتے ہیں وہ تاریخ میں زندہ رہتے ہیں۔گزشتہ روزگورنر ہاؤس لاہور میں غیر سرکاری تنظیموں کے ملاقات کیلئے آنیوالے نمائندوں سے گفتگو میں گورنر پنجاب کا مزید کہناتھا عوام کو صحت و تعلیم کی بنیادی سہولیات فراہم کرنا حکومت کی اولین ترجیح ہے جبکہ حکومت شہریوں کو صاف پانی کی فراہمی ، ہیپاٹائٹس کے خاتمے اور دیگر شعبوں میں بھی ہنگامی بنیادوں پر کام کررہی ہے، ملک بھر میں عوام کی فلاح و بہبود کیلئے کام کرنیوالی این جی اوز کا کردار قابل تحسین ہے، حکومت غیر سرکاری تنظیموں کو ہر ممکن تعاون فراہم کرنے کو تیار ہے ، اگرفلاحی تنظیمیں حکومت کیساتھ مل کر ایک پلیٹ فارم پر کام کریں تو عوام کیلئے زیادہ فائدہ مند ثابت ہوگا۔ اْنہوں نے کہا بلاشبہ ہمارے ملک میں خدمت انسانیت کا جذبہ رکھنے والوں کی کمی نہیں اور آج بھی سینکڑوں کی تعداد میں مخیر حضرات دل کھول کر انسانیت کی خدمت کررہے ہیں۔اس موقع ڈاکٹر امجد ثاقب کی سربراہی میں 7رْکنی کمیٹی تشکیل دی گئی جو این جی اوز کے کام کو رجسٹرڈ کرے گی اور ان کو درپیش مسائل کے حل کیلئے اپنی سفارشات مرتب کرے گی۔قبل ازیں گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور سے لاہور میں متحدہ عرب امارات کے سفیر حامد عبید الا ز ابی نے ملاقات کی جس میں باہمی دلچسپی کے امور کے علاوہ دو طرفہ تعلقات کو مزید بہتر بنانے بالخصوص پنجاب میں سرمایہ کاری کو فروغ د ینے پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ گورنر پنجاب نے کہا پاکستان امن پسند ملک ہے اور دنیا کے کسی بھی کونے میں ہونیوالی دہشت گردی کی پْر زور مذ مت کرتا ہے۔پاکستان نے دہشتگردی کیخلاف جنگ میں جتنی جانی و مالی قربانیاں دی ہیں کسی اور ملک نے نہیں دیں لیکن بدقسمتی سے بین الاقوامی سطح پر ہماری قربانیوں کو سراہا نہیں گیا۔ گورنر نے کہا پاکستان بالخصوص پنجاب میں سرمایہ کاری کے وسیع امکانات موجود ہیں، متحدہ عر ب امارات کے سرمایہ کاروں کو تمام سہولیات فراہم کی جائیں گی۔ا س موقع پر متحدہ عرب امارات کے سفیر حامد عبید الازابی نے کہا ہم پاکستا ن کو اپنا دوسرا گھر سمجھتے ہیں اوریو اے ای کے سرمایہ کار پنجاب میں سرمایہ کاری کرنا چاہتے ہیں، سولر،پانی،ہاؤسنگ اور انفراسٹرکچر کے منصو بوں پر کام کیا جاسکتا ہے۔دریں اثناہء گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور سے ڈبلیو ایچ او کے 6رْکنی وفد نے بھی ملاقات کی اور صوبے میں ٹی بی کے خاتمے کیلئے کئے گئے اقدامات پر تفصیلی تبادلہ خیال ہوا۔گورنر پنجاب نے کہا حکومت پنجاب ٹی بی جیسی مہلک بیماری کو کنٹرول کرنے کیلئے جامع و مربوط پروگرام کے تحت کام کررہی ہے جبکہ این جی اوز اور مخیر حضرات کیساتھ مل کر ٹی بی ، ہیپاٹائٹس اور دیگر بیماریوں سے متعلق عوام میں آگاہی اور احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کیلئے جامع پروگرام تشکیل دے رہی ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -