تجارتی مواقع سیاستعفادہ کی ضرورت ،پاکستان خطے میں برآمدات 8گنا بڑھا سکتا ہے ،عالمی بینک

تجارتی مواقع سیاستعفادہ کی ضرورت ،پاکستان خطے میں برآمدات 8گنا بڑھا سکتا ہے ...

  

اسلام آباد (این این آئی)عالمی بینک نے کہا ہے کہ پاکستان کے پاس تجارت کی ترقی کے بے پناہ مواقع ہیں جن سے بھر پور طور پر استفادہ حاصل کرنے کی ضرورت ہے،جنوبی ایشیائی ممالک کیساتھ پاکستان کی تجارت کا حجم 23 ارب ڈالر سے 67 ارب ڈالر سالانہ تک بڑھ سکتا ہے، علاقائی تجارت کی مکمل صلاحیت بروئے کار لانے کیلئے خطے کیساتھ غیر ضروری نان ٹیرف رکاوٹیں دور کرکے عوامی سطح پر رابطوں کو فروغ دینے، زمینی و فضائی رابطے کے ذرائع کو ترقی دینے اور جنوبی ایشیا کے اندر تجارت کو آزاد بنانے کی ضرورت ہے۔بدھ کو عالمی بینک کے لیڈ اکانومسٹ اور حال ہی میں جاری کردہ رپورٹ کے مصنف سنجے کتھوریا نے صحافیوں کے ایک گروپ کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان کی جنوبی ایشیائی ممالک کے ساتھ تجارت اس کی مجموعی عالمی تجارت کا 8 فیصد ہے جبکہ یہ خطے میں اپنی برآمدات 8 گنا تک بڑھا سکتا ہے۔ ’ گلاس ہاف فل، جنوبی ایشیا میں علاقائی تجارت کی امید‘ کے عنوان سے جاری رپورٹ میں جنوبی ایشیا میں تجارت کی مکمل صلاحیت کو بروئے کار لانے کی ضروریات کو اجاگر کیا گیا ہے۔ سنجے کتھوریا نے کہا کہ پاکستان کی جنوبی ایشیا میں علاقائی تجارت کا حجم 5.1 ارب ڈالر ہے جبکہ اس کی سالانہ علاقائی تجارت کی صلاحیت 39 ارب ڈالر ہے، اسی طرح باقی دنیا کے ساتھ اس کی تجارت کا حجم 67.9 ارب ڈالر ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان جنوبی ایشیائی ممالک کے ساتھ تجارت کا حجم 67 ارب ڈالر تک سالانہ بڑھانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔انہوں نے کہا کہ علاقائی تجارت کی مکمل صلاحیت کو بروئے کار لانے کے لئے خطے کے ساتھ غیر ضروری نان ٹیرف رکاوٹوں کو دور کرتے ہوئے عوامی سطح پر رابطوں کو فروغ دینے، زمینی و فضائی رابطے کے ذرائع کو ترقی دینے اور جنوبی ایشیا کے اندر تجارت کو آزاد بنانے کی ضرورت ہے۔

عالمی بنک

مزید :

صفحہ آخر -