اشیائے خوردو نوش کی قیمتوں میں خو د ساختہ اضافہ کسی صورت قابل قبول نہیں

اشیائے خوردو نوش کی قیمتوں میں خو د ساختہ اضافہ کسی صورت قابل قبول نہیں

  

جہلم(نامہ نگار)اشیائے خوردو نوش کی قیمتوں میں خو د ساختہ اضافہ کسی صورت قابل قبول نہیں، نان، روٹی کا وزن چیک کر کے کریک ڈاون کیا جائیگا ، ایڈیشنل ڈائریکٹر لائیو سٹاک معیاری گوشت کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لئے چیکنگ کریں ۔ان خیالات کااظہار ڈپٹی کمشنر جہلم محمد سیف انور جپہ نے اشیائے خوردو نوش کی از سر نو تعین کے سلسلہ میں پرائس کنٹرول کمیٹی کے ماہانہ جائزہ اجلاس کی صدارت کرتے ہو ئے کیا۔اس موقع پر اے ڈی سی ایف محمد ربنواز، ڈی او انڈسٹریز محمد سعید، ایڈیشنل ڈائریکٹر لائیو اسٹاک سید کمال ناصر، سیکریٹری مارکیٹ کمیٹی اور دیگر شریک تھے ۔انہوں نے کہا کہ جہلم کی چاروں تحصیلوں میں کسی کو ناجائز منافع خوری کی ہر گزاجازت نہیں دی جائے گی، دودھ میں ملاوٹ کی شکایت عوام ڈی سی او اے سی دفتر میں درج کروائیں، اسسٹنٹ کمشنرز اپنی اپنی تحصیل میں نگرانی کریں گے ۔انہوں نے کہا کہ تاجر برادری انتظامیہ سے تعاون کرے اور پرائس کنٹرول کمیٹی کی طرف سے مقرر کردہ قیمتوں پر اشیائے خوردونوش کی فروخت کو یقینی بنائیں۔ خلاف ورزی کرنے والوں سے سختی سے نمٹا جائیگا، انہو ں نے کہا کہ ریٹ تاجر نمائندوں کی مشاورت سے مقرر کیے جاتے ہیں اور تاجر نمائندوں کی زمہ داری ہے کہ وہ دوکاندروں کو بھی آگاہ کریں کہ خلاف ورزی کی صورت میں انہیں جرمانے اور جیل کی سزاکا سامنا کر نا پڑے گا۔انہوں نے مزید کہا کہ پرائس کنٹرول مجسٹریٹس بڑی مارکیٹوں، جنرل سٹورز کے ساتھ ساتھ گلی محلوں اور دیہی علاقوں میں بھی بھرپور کاروائیاں کریں۔ مضر صحت اور ملاوٹ شدہ گوشت، دودھ، مرچ،مسالحہ جات اور دیگر اشیاء بیچنے ، بنانے والے قوم کے دشمن ہیں جن سے کوئی رعایت نہیں برتی جائے گی۔ تاجروں نمائندوں کی مشاورت سے آٹا چکی سے خریدا جانے والا آٹا 760 روپے فی 20 کلومقرر کیا گیا جبکہ چینی کی قیمت 58 روپے فی کلو، باسمتی چاول110روپے فی کلو، دال ماش 90 روپے فی کلو، دال چنا موٹی 115 روپے فی کلو ، دال چنا باریک 105 روپے فی کلو، سفید چنا لوکل سندھی 105 روپے فی کلو،سفید چنا 9 ایم ایم 130 روپے فی کلو،بیسن 120 روپے فی کلوجبکہ،لال مرچ 340 روپے فی کلوکے حساب سے مہیا ء کی جائے گی، روٹی 100 گرام 7 روپے ، نان 120 گرام 8 روپے ، دودھ 80 روپے ، دہی 80 روپے کے حساب سے بیچا جائے گا تاہم معیار پر ہرگز سمجھوتہ نہیں کیا جا سکے گا۔گردوارے کا ترقیاتی کام اس سے قبل 1938 میں شروع کیا گیا جو 1944 میں مکمل ہوا۔ ایسے مقامات کو اصل حالت میں محفوظ کرنے کے لئے عملی اقدامات کیے جارہے ہیں کام مکمل ہونے پر سکھ یاتریوں اور دیگر سیاحوں کے لئے گردوارہ بھائی کرم سنگھ کو کھولا جائے گاان خیالات کااظہار ڈپٹی کمشنر جہلم محمد سیف انور جپہ نے اٹھارویں صدی میں تعمیر ہونیوالا گردوارہ بھائی کرم سنگھ جہلم کا خصوصی دورہ کے موقع پر کیا، انہوں نے کہا کہ ایسے تاریحی مقامات کی تزئین و آرائش وقت کی ضرورت ہے ، ڈپٹی کمشنر نے ڈویلپمنٹ افسران کو ہدایت دی ہے کہ گروارہ کی پرانی تصویروں اور نقش کے مطابق اس کو اصل حالت میں محفوظ کیا جائیگا، ڈپٹی کمشنر نے گردوارہ بھائی کرم سنگھ کو اصل حالت میں محفوظ کرنے کے لئے خصوصی ڈاکومنٹری بنوا کر اعلیٰ حکام کے نوٹس میں لانے کا فیصلہ بھی کیا ہے۔دورہ کے موقع پر ڈسٹرکٹ انفارمیشن آفیسر عثمان سندھو، پی ایس او طیب علوی، راجہ وقار،نعیم بھٹی اور دیگر موجود تھے ۔جہلم میں معصوم طالب علموں کوممنوع تمباکو فلیورز فروخت کرنے والوں کیخلاف تھانہ سول لائن اور سٹی کی مشترکہ کاروائی،ملزم گرفتار مقدمہ درج،جہلم کچہری کے قریبی علاقہ کے نجی سکول کی ہیڈ مسٹریس کے میڈیا کو آگاہ کرنے پر اور میڈیا کی نشاندہی پر ڈی پی اوجہلم کی ہدایت پر ڈی ایس پی سٹی سرکل فیصل سلیم کی سربراہی میں پولیس نے فوری کاروائی کی،تفصیلات کے مطابق کچہری کے قریبی علاقہ میں نجی سکول کی ہیڈ مسٹریس نے میڈیا کو بتایا کہ پانچویں جماعت کے بچوں کے سکول بیگ سے ممنوع تمباکور فلیورز اور الیکٹرونکس پین سگریٹ ملے ہیں جس کے متعلق بچوں کے والدین کو آگاہ کیا ہے، یہ معصوم بچے دوکان سے دو چار دوست ملکر الیکٹرونکس پین سگریٹ خریدتے ہیں او ر پھر روزانہ صبح سکول آنے سے پہلے اس پین میں استعمال ہونے والا کیمیکل تمباکو فلیورز خرید کر اس سے لطف اندوز ہوتے ہیں جب بچوں سے پوچھا تو انہوں نے بتایا کہ اس سے جو دھواں نکلتا ہے اس سے رنگ بنتے ہیں اور ہم لطف اندوز ہوتے ہیں دوران تلاشی کئی بار بچوں کے بیگ سے الیکٹراک پین سگریٹ اور تمباکو فلیورز ملے ہیں اس مسئلہ پر ہم میڈیا کا تعاون چاہتے ہیں میڈیا کے نمائندوں نے ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر ڈاکٹر سید مصطفی تنویر کو اس صورتحال کی تفصیلات سے آگاہ کیا تو انہوں نے فوری طور پر ایکشن لیتے ہوئے ڈی ایس پی سٹی سرکل فیصل سلیم کو فوری کاروائی کے احکامات جاری کیے،ڈی ایس پی سٹی سرکل کی سربراہی میں تھانہ سٹی اور سول لائن پولیس نے مشترکہ کاروائی کرتے ہوئے سول لائن شاندار چوک سے دکاندار ندیم رشید کو تمباکو فلیورز فروخت کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں گرفتار کر لیا جس سے 108پیکٹ شیشہ اور دو عدد الیکٹرونکس سگریٹ برآمد کر کے ملزم کے خلاف زیر دفعہ 3/6امتناع شیشہ ،سموکنگ ایکٹ 2004کے تحت مقدمہ درج کر کے کاروائی شروع کر دی ہے،ستم ظریفی یہ ہے کہ جو معصوم بچے اس لت میں مبتلا ہیں وہ پانچویں کلاس کے طالب علم ہیں اور الیکٹرونکس پین سگریٹ میں ممنوع تمباکو فلیور ز کا استعمال نشئی بننے کی پہلی سیڑھی ہے ایسے عناصر کو کڑی سے کڑی سزا دی جانی چاہیے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -