کے الیکٹرک کی بلدیہ اور لیاری میں کنڈوں کے خلاف کارروائی

کے الیکٹرک کی بلدیہ اور لیاری میں کنڈوں کے خلاف کارروائی

  

کراچی (پ ر)کے الیکٹرک کی جانب بجلی چوری اور غیرقانونی طریقہ سے بجلی کے حصول کے خاتمہ کیلئے کی جانے والی کوششوں کے نتیجے میں، رواں سال کے درمیانی عرصہ میں، بلدیہ اور لیاری کے علاقوں سے 30,755 کلوگرام سے زائد وزنی غیر قانونی ’’کنڈوں ‘‘ کا خاتمہ کر دیا گیا۔ کنڈوں کیلئے استعمال ہونے والے اِن تاروں میں سے بعض سینکڑوں میٹرز طویل تھے جنہیں پاور یوٹیلیٹی کی جانب سے ’’کنڈوں‘‘کے خلاف جاری مہم کے دوران اتارا گیا۔ ان مہموں کے دوران بجلی چوری سے پاک ایرئیل بنڈلڈ کیبلز (ABC) بھی نصب کیے گئے جس کی بدولت شہر کا تقریباً 70 فیصد حصہ لوڈ شیڈنگ سے مستثنیٰ ہوچکا ہے ،جو کے الیکٹرک کی شہر کے تمام علاقوں کو بجلی کی قابل بھروسہ اور بلا تعطل فراہمی یقینی بنانے کی کوششوں کا حصہ ہے۔کے الیکٹرک کے ترجمان کے مطابق، ’’ادارے نے ایک مرتبہ پھر اس بات پر زور دیا ہے کہ غیر قانونی کنڈا کنکشنز عوام کیلئے خطر ے کا باعث بننے کے علاوہ پاور انفراسٹرکچر کو بھی نقصان پہنچا رہے ہیں جس سے بجلی کی فراہمی متاثرہورہی ہے۔ کے الیکٹرک بجلی کی چوری کا سراغ لگانے اور بجلی چوروں کیخلاف کارروائی عمل میں لانے کیلئے خودکارطریقے سے میٹر ریڈنگ حاصل کرنے والے انرجی سسٹمز اور ڈسٹری بیوشن کی سطح پر مؤثرانرجی آڈٹس انجام دینے سمیت جدید ٹیکنالوجیز استعمال کر رہی ہے ۔ کے الیکٹرک بجلی چوری کے خاتمہ کیلئے پرعزم ہے اور اس کے خاتمہ کیلئے کمیونٹی کے تعاون کو سراہتی ہے۔‘‘بجلی کی چوری اور غیر قانونی طریقے سے بجلی کے حصول کوروکنے کیلئے، کے الیکٹرک کی مسلسل کاوشوں اور دیگر ترقیاتی سرگرمیوں کے نتیجے میں ، 2009 سے اب تک ، پاور یوٹیلیٹی نے ٹرانسمیشن اور ڈسٹری بیوشن کے شعبوں میں ہونے والے نقصانات میں تقریباً 14 فیصد کمی کی ہے۔ بجلی چوری کے بارے میں رپورٹ 118 یا 021-99000 پر کال کر کے یا کے الیکٹرک کے فیس بک اور ٹوئٹر پیجز کے ذریعے یا speakup@ke.com.pkپر ای میل کے ذریعہ کی جاسکتی ہے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -