اپنے دفاع میں کچھ پیش کرنے کی ضرورت نہیں،استغاثہ میرے خلاف ثبوت پیش کرنے میں ناکام رہا،نوازشریف کا فلیگ شپ ریفرنس میں دفاع پیش کرنے سے انکار

اپنے دفاع میں کچھ پیش کرنے کی ضرورت نہیں،استغاثہ میرے خلاف ثبوت پیش کرنے میں ...
اپنے دفاع میں کچھ پیش کرنے کی ضرورت نہیں،استغاثہ میرے خلاف ثبوت پیش کرنے میں ناکام رہا،نوازشریف کا فلیگ شپ ریفرنس میں دفاع پیش کرنے سے انکار

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سابق وزیراعظم نوازشریف نے العزیزیہ اور ایون فیلڈ کی طرح فلیگ شپ ریفرنس میں بھی اپنا دفاع پیش کرنے سے انکار کردیا،ان کا کہناتھا کہ اپنے دفاع میں کچھ پیش کرنے کی ضرورت نہیں،استغاثہ میرے خلاف ثبوت پیش کرنے میں ناکام رہا،1972 کے دوران اتفاق فاو¿نڈری میں ہزاروں ملازم تھے،ریکارڈپیش کرتالیکن 1999 میں پرویز مشرف نے ضبط کرلیا،ہم نے توڈھاکامیں بھی مل لگائی تھی،میرے خلاف مقدمات بدنیتی پرمبنی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت میں فلیگ شپ ریفرنس کی سماعت جاری ہے،سابق وزیراعظم نوازشریف فلیگ شپ ریفرنس میں 4 سوالات کے جواب ریکارڈ کرا دیئے۔العزیزیہ اورایون فیلڈ کی طرح نوازشریف نے پھراپنادفاع پیش نہیں کیا، نوازشریف کا کہناتھا کہ اپنے دفاع میں کچھ پیش کرنے کی ضرورت نہیں،استغاثہ میرے خلاف ثبوت پیش کرنے میں ناکام رہا، سابق وزیراعظم نے کہا کہ حسین اورحسن نواز کے میرے زیرکفالت ہونے کابھی ثبوت نہیں،استغاثہ بارثبوت منتقلی ثابت کرنے میں بھی ناکام رہا۔

سابق وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان کابیٹاہوں،اس کے ذرے ذرے سے پیارہے،مجھے فخر ہے 3 بارپاکستان کاوزیراعظم بنا،پاکستانی عوام کامشکورہوں جنہوں مجھ پراعتمادکیا،ان کا کہناتھا کہ سیاست میں میرے خاندان اورکاروبارکونشانہ بنایاگیا، مجھ پرلگائے گئے الزامات بے بنیادہیں، میراکاروبار سے کوئی تعلق نہیں تھا۔

سابق وزیراعظم نے کہا کہ میں استغاثہ سے صرف 4 سوال پوچھناچاہتاہوں،استغاثہ بتائے بیرون ملک جائیدادکاکنٹرول میرے پاس رہا؟انہوں نے کہا کہ استغاثہ بتائے جائیدادکیلئے رقم میں نے دی؟استغاثہ یہ بھی بتائے بےنامی دارکامقصدکیاہے؟نوازشریف نے کہا کہ استغاثہ مندرجہ بالاالزامات پرشواہدپیش کرے،نسلیں کھنگالنے کے باوجودبدعنوانی کاثبوت تودورکوئی الزام بھی نہیں،سابق وزیراعظم نے کہا کہ بدعنوانی کاالزام نہ لگنامیرے لیے باعث اطمینان ہے،مفروضوں کے الزامات نہیں ہواکرتے،بات گھسے پٹے آمدن سے زائداثاثوں پرآئی،وہ بھی ثابت نہیں ہوئی۔

قائد ن لیگ نے کہا کہ 1972 کے دوران اتفاق فاؤنڈری میں ہزاروں ملازم تھے،ریکارڈپیش کرتالیکن 1999 میں پرویزمشرف نے ضبط کرلیا،ہم نے توڈھاکامیں بھی مل لگائی تھی،میرے خلاف مقدمات بدنیتی پرمبنی ہیں۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -علاقائی -اسلام آباد -