منشا بم کے بعد اراضی قبضہ کیس میں لاہور سے ایک اور ”بم“ پکڑا گیا، یہ کس طریقے سے قبضہ کرنا چاہتا تھا؟ بڑی خبرآگئی

منشا بم کے بعد اراضی قبضہ کیس میں لاہور سے ایک اور ”بم“ پکڑا گیا، یہ کس طریقے ...
منشا بم کے بعد اراضی قبضہ کیس میں لاہور سے ایک اور ”بم“ پکڑا گیا، یہ کس طریقے سے قبضہ کرنا چاہتا تھا؟ بڑی خبرآگئی

  

لاہور(ویب ڈیسک)بدنام قبضہ گروپ منشابم کے بھائی مشتاق بم سمیت پانچ افراد کے خلاف اراضی پر قبضہ کرنے کی کوشش ے الزام میں پرچہ درج کرکے مشتاق بم کو گرفتار کرلیاگیا۔

روزنامہ دنیا کے مطابق مشتاق بم نے چار ساتھیوں غلام نبی کبیر جاوید ہمایوں کیساتھ موضع رکھ لدکی میں زمیندار اصغر کی 2کنال زرعی اراضی پر پانی لگاکر قبضہ کی کوشش کی ،پولیس نے مدعی کی درخواست پرمشتاق بم کو موقع سے حراست میں لے لیا جبکہ اس کے دیگر ساتھی فرار ہوگئے۔دوسری جانب ثمن زار رحمان آباد ہاﺅسنگ سکیم میں منشا بم کے 9 پلاٹس کا انکشاف ہوا ہے محمود اشرف نامی اوورسیز پاکستانی سے 2003 سے 2008 کے دوران مختلف اوقات میں پلاٹ خریدے۔ کل اراضی 9 کنال 10 مرلہ بنتی ہے ۔

ذرائع کے مطابق 6 کنال 3 مرلے منشا بم کے نام سے ٹرانسفر ہوئی 3 کنال 7 مرلے منشا بم کے بھائی مشتاق احمد کے نام سے ٹرانسفر ہوئی تھی۔ منشا بم نے سیاسی پشت پناہی پر جوہر ٹائون میں اربوں روپے کی اراضی پر قبضہ کیا محکمہ مال کی رپورٹ کے مطابق جوہرٹائون میں 29 کنال اربن اراضی پر قبضہ کر لیا اس 29 کنال اربن اراضی کی ملکیت ایک ارب 86کروڑ روپے ہے رپورٹ میں ملک منشا کھوکھر عرف منشا بم ، طارق منشا ، فیصل منشا ، عامر منشا، اور عاصم منشا کے نام شامل ہیں محکمہ مال کی رپورٹ میں منشا بم کو پاکستان تحریک انصاف کی وابستگی حاصل ہے۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور