آئی جی تبادلہ کیس ،اعظم سواتی نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا

آئی جی تبادلہ کیس ،اعظم سواتی نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا
آئی جی تبادلہ کیس ،اعظم سواتی نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) آئی جی تبادلہ کیس میں ملوث اعظم سواتی نے موجودہ حالات میں کام کرنے سے معذوری ظاہر کرتے ہوئے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ، وزیر اعظم عمران خان نے وفاقی وزیر  سائنس و ٹیکنالوجی کا استعفیٰ قبول کر لیا ہے ۔

نجی ٹی وی ’’اے آروائی نیوز‘‘ نے دعویٰ کیا ہے کہ آئی جی تبادلہ کیس کے باعث اعظم سواتی نے وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات کرتے ہوئے موجودہ حالات میں کام کرنے سے معذوری ظاہر کی اور کہا کہ جب تک ان کے کیس کا فیصلہ نہیں ہو جاتا وہ بطور وفاقی وزیر کام کرنا نہیں چاہتے اور نہ ہی حکومت کا حصہ رہنا چاہتے ہیں۔انہوں نے وزیر اعظم کو اپنا استعفیٰ پیش کیا جسے عمران خان نے قبول کر لیا ۔اعظم سواتی کا کہنا تھا کہ  اخلاقیات کو ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے مستعفی ہورہا ہوں، مستعفی ہونے کے بعد سپریم کورٹ میں مقدمے کا دفاع کروں گا، کسی عہدے کے بغیر اپنا کیس سپریم کورٹ میں پیش کروں گا ۔یاد رہے کہ اس سے قبل وزیر اعظم عمران خان نے کہا تھا کہ اگر اعظم سواتی قصور وار ہوئے تو خود ہی مستعفی ہوجائیں گے۔ سپریم کورٹ میں آئی جی تبادلہ کیس کی گذشتہ روز ہونے والی سماعت کے دوران چیف جسٹس نے اعظم سواتی پر آرٹیکل 62 ون ایف کا اطلاق کرنے کا عندیہ دیا تھا۔

خیال رہے کہ گزشتہ دنوں سینیٹر اعظم سواتی کے فارم میں مبینہ طور پر پڑوسیوں کی ایک گائے گھس گئی تھی جس پر نہ صرف اس غریب خاندان کو تشدد کا نشانہ بنایا گیا بلکہ ان کی خواتین تک کو جیل میں ڈال دیا گیا تھا۔ اعظم سواتی کا حکم نہ ماننے پر آئی جی اسلام آباد کو بھی تبدیل کردیا گیا تھا جس کے بعد چیف جسٹس نے معاملے کا از خود نوٹس لیا تھا۔ چیف جسٹس کی جانب سے قائم کی جانے والی جے آئی ٹی نے معاملے کی تحقیقات کے بعد اعظم سواتی کو معاملے میں قصور وار قرار دیا تھا۔

مزید : قومی /سیاست /علاقائی /اسلام آباد /اہم خبریں /Breaking News